The news is by your side.

Advertisement

بینظیر انکم سپورٹ پروگرام میں کرپشن: پی پی رہنما فرزانہ راجہ پر فردِ جرم عائد کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد : احتساب عدالت نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام میں کرپشن کیس میں پیپلزپارٹی رہنما فرزانہ راجہ سمیت تمام ملزمان پر فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کرلیا ، 15 فروری کو تمام ملزمان پر فرد جرم عائد کی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں بینظیر انکم سپورٹ پروگرام میں کرپشن ریفرنس سے متعلق سماعت ہوئی ، جس میں عدالت نے فرزانہ راجہ سمیت تمام ملزمان پر فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے تمام ملزمان 15 فروری کو فرد جرم کے لیےپیش ہونے کا حکم دیا۔

دوران سماعت نیب کو انتقال کر جانے والے ملزم کا ڈیٹھ سرٹیفکیٹ فراہم کر دیا گیا، وکیل نے ڈیتھ سرٹیفکیٹ پیش کیا اور بتایا ملزم خرم ہمایوں انتقال کر گئے ہیں۔

حتساب عدالت نے دو ملزمان عفت زہرا اور شعیب خان کو اشتہاری قرار دیتے ہوئے دونوں ملزمان کے دائمی وارنٹ جاری کردیئے جبکہ جائیداد ضبطی کا حکم دیا۔

احتساب عدالت نے عفت زہرااور شعیب خان کے شناختی کارڈ بلاک کرنے کا بھی حکم دیا،اشتہاری قرار پانے والے ملزم شعیب خان سابق ڈائریکٹر انکم سپورٹ پروگرام ہیں جبکہ دوسری اشتہاری ملزمہ عفت زہرا کا تعلق نجی کمپنی سے تھا۔

بعد ازاں کیس کی سماعت 15 فروری تک ملتوی کردی گئی، بینظیر اِنکم سپورٹ پروگرام میں ملزمان پر 54کروڑ کی کرپشن کا الزام ہے۔

یاد رہے قومی احتساب بیورو (نیب ) نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام میں مبینہ کرپشن کے خلاف ریفرنس دائر کیا تھا ، ریفرنس میں انیس ملزمان کو فریق بنایا گیا تھا۔

بے نظیرانکم سپورٹ پروگرام سے فائدہ اٹھانے والے تمام افسران کو ایف آئی اے نے طلبی کے نوٹس جاری کر تے ہوئے افسران کو ایف آئی اے کارپوریٹ کرائم سرکل طلب کیا گیا تھا اور تمام افسران کوبی آئی ایس پی کی سلپ،دیگر دستاویز لانے کی ہدایت کر دی گئی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں