The news is by your side.

Advertisement

عدالت قانون کے مطابق شہباز شریف کی اہلیہ کی درخواست مسترد کرتی ہے، تحریری حکم

لاہور : احتساب عدالت نے منی لانڈرنگ کیس میں شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز کی حاضری سےاستثنیٰ کی درخواست پر تحریری حکم جاری کردیا، جس میں کہا گیا ہے کہ عدالت قانون کےمطابق نصرت شہبازکی درخواست مستردکرتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت نے شہباز شریف خاندان کےخلاف منی لانڈرنگ کیس میں نصرت شہباز کی حاضری سےاستثنیٰ کی درخواست پر تحریری حکم جاری کردیا، احتساب عدالت کے منتظم جج جواد الحسن نے 5صفحات کاتحریری حکم جاری کیا۔

تحریری حکم میں کہا گیا نصرت شہباز نےٹرائل سے مستقل حاضری سےاستثنیٰ کی استدعا کی ، پراسیکیوشن کے مطابق خاتون پہلے پاکستان میں رہائش پذیر تھیں، تفتیش کے لیے متعددبارسوال نامہ گھر بھیجاگیا تاہم نصرت شہباز نےدوران تفتیش کوئی تعاون نہ کیا۔

تفتیشی افسر نے کہا کہ انصرت شہباز کے اکاؤنٹس سے بھاری رقم منتقل ہوئی جبکہ پراسیکیوشن کے مطابق ملزمہ کاٹرائل جوائن کرنا ضروری ہے، تفتیش کے لیے بھیجےگئےسوالنامےکےجواب آج تک نہیں دیے گے، تفتیشی افسر کے مطابق نصرت شہباز تفتیش اورنہ ہی عدالتی کارروائی میں شامل ہوناچاہتی ہیں۔

تحریری حکمنامے میں کہا گیا کہ کیا ایسا اقدام قانون کے مطابق درست ہے؟ نصرت شہباز کےوکیل کے مطابق وہ بیرون ملک 2019 سے زیرعلاج ہیں، چل پھر نہیں سکتیں اور سفر بھی نہیں کرسکتیں۔

حکم نامے کے مطابق نصرت شہبازکی انگلینڈ سےمیڈیکل رپورٹس بھیجی گئی ہیں، عدالت قانون کےمطابق نصرت شہبازکی درخواست مستردکرتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں