site
stats
پاکستان

نوازشریف کےمختلف بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات عدالت میں پیش

Nawaz Sharif

اسلام آباد : احتساب عدالت نے عدالت میں پیش کردہ دستاویزات کے خلاف سابق وزیراعظم میاں محمد نوازشریف کی معاون وکیل کی دائردرخواست خارج کردی۔

تفصیلات کے مطابق احتساب کے عدالت جج محمد بشیر نا اہل وزیراعظم نوازشریف کے خلاف العزیزیہ ریفرنس کی سماعت کررہے ہیں۔

عدالت میں سماعت کے آغاز پر نوازشریف کی معاون وکیل عائشہ حامد نے استغاثہ کی گواہ نورین شہزاد کی جانب پیش کردہ دستاویزات کے خلاف درخواست دائر کی۔

عائشہ حامد نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ نورین شہزاد کا نام گواہوں میں شامل نہیں ہے کس حیثیت میں یہ دستاویزات پیش کررہی ہیں۔

نوازشریف کی معاون وکیل نے کہا کہ نورین شہزاد اپنے ادارےکا اتھارٹی لیٹرپیش کرنے میں ناکام رہیں، ان کی دستاویزات کوریکارڈ کا حصہ نہیں بنایا جاسکتا، دستاویزات کوریکارڈ سےخارج کیا جائے۔

عائشہ حامد نے کہا کہ نورین شہزاد کو پیش کرنے سے پہلے ہمیں نوٹس نہیں کیا، کل بھی یہ خاتون عدالت میں تھیں مگرہمیں نہیں بتایا گیا۔

نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ اب بینک کی منیجرنورین شہزاد ہیں اس لیے ان کی دستاویزات کو ریکارڈ کا حصہ بنایا جائے۔

احتساب عدالت نے نوازشریف کی معاون وکیل کی درخواست مسترد کردی اور نورین شہزاد کی دستاویزات کو ریکارڈ کا حصہ بنا لیا گیا۔

استغاثہ کے گواہ ملک طیب نے نوازشریف کے مختلف بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات عدالت میں پیش کردیں۔

احتساب عدالت میں پیش کی گئی دستاویزات کے مطابق 12مئی 2012 کو 50 ہزار کے3 چیک جاری ہوئے، 8 دسمبر 2012 کو 50 ہزار کے 6 چیک جاری ہوئے۔

استغاثہ کے گواہ ملک طیب نے عدالت میں بتایا کہ 12مئی 2012 کو1.5 ملین کا چیک کیش کرایا گیا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top