The news is by your side.

Advertisement

نیب پراسیکیوشن ونگ نےوالیم 10 کےلیےعدالت کوخط لکھا تھا‘ ظاہرشاہ

اسلام آباد : سابق وزیراعظم نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیرکررہے ہیں۔

مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف، مریم نواز احتساب عدالت سے روانہ ہوگئے جبکہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر احتساب عدالت میں موجود ہیں جبکہ مریم نواز کے وکیل امجد پرویز نےڈی جی آپریشنز نیب ظاہرشاہ پرجرح مکمل کرلی۔


مریم نوازکے وکیل امجد پرویزکی ظاہرشاہ پرجرح مکمل

استغاثہ کے گواہ ڈی جی آپریشنز نیب ظاہرشاہ نے سماعت کے آغاز پرعدالت کوبتایا کہ والیم 10 کی کاپی رجسٹرارکے خط کے ذریعے حاصل کی، والیم 10متعلقہ کوآرڈینیشن آفیسرنے وصول کیا تھا۔

ڈی جی آپریشنز نیب ظاہرشاہ نے کہا کہ نیب پراسیکیوشن ونگ نے والیم ٹین کے لیے عدالت کوخط لکھا تھا۔

خیال رہے کہ گزشتہ روزاحتساب عدالت میں ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کے دوران نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث اور نیب پراسیکیوٹر کے درمیان تلخ کلامی ہوئی تھی۔


ایون فیلڈ ریفرنس: ڈی جی نیب ظاہر شاہ دستاویزات کے ساتھ پیش

ڈی جی آپریشنز نیب ظاہرشاہ نے لندن فلیٹس کی ٹائٹل رجسٹری کی آفیشل کاپیاں، پانی کے بل اور کونسل ٹیکس ریکارڈ بھی احتساب عدالت میں جمع کروایا تھا۔

ظاہرشاہ کا کہنا تھا کہ 31 اکتوبر 2017 کو وہی دستاویزات مانگی جو27 مئی کو مانگی تھیں۔ عثمان احمد نے27 مارچ 2017 کو دستاویزات حوالے کیں۔

انہوں نے بتایا تھا کہ تفتیشی افسر نے میرے بلانے کے اگلے روز دستاویزات وصول کیں۔ تفتیشی افسر نے دستاویزات لے جانے کے بعد شامل تفتیش نہیں کیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں