عدالت کا اسحاق ڈارکےضامن کی منقولہ جائیداد قرق کرنےکا حکم -
The news is by your side.

Advertisement

عدالت کا اسحاق ڈارکےضامن کی منقولہ جائیداد قرق کرنےکا حکم

اسلام آباد : احتساب عدالت نے سابق وزیرخزانہ اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت 18 دسمبر تک ملتوی کردی۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں احتساب عدالت کے جج محمد بیشرنے اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت کی۔

عدالت میں سماعت کے دوران استغاثہ کے گواہ محمد عظیم عدالت میں پیش ہوئے اور اپنا بیان ریکارڈ کروایا جبکہ دوسرے گواہ فیصل شہزاد اپنی بہن کی شادی کی وجہ سے پیش نہ ہوسکے۔

عظیم طارق خان اسحاق ڈار اور ان کی فیملی کے 3بینک اکاؤنٹ کی تفصیل پیش کیں اور بتایا کہ نیب نے اگست 2017 میں اسحاق ڈارکے اکاؤنٹ کی تفصیل مانگی تھی۔

استغاثہ کے گواہ نے کہا کہ اسحاق ڈار کا پہلا اکاؤنٹ اکتوبر2001 سےاکتوبر 2012 کے درمیان کھولا گیا جبکہ دوسرا اکاؤنٹ اگست 2012 سے دسمبر 2016 کے درمیان کھولا گیا۔

عظیم خان نے عدالت کو بتایا کہ تیسرا اکاؤنٹ جنوری 2017 سے اگست 2017 کے درمیان فعال رہا۔

استغاثہ کے گواہ نے تمام اکاؤنٹس کی کمپیوٹرائزڈ تفصیلات عدالت میں پیش کیں، ہجویری ہولڈنگ کمپنی کے اکاؤنٹ کی تفصیلات بھی ریکارڈ کا حصہ ہے۔

اسحاق ڈار اور ان کی اہلیہ کے نام پر لاکر کا ریکارڈ بھی احتساب عدالت میں پیش کردیا گیا۔

دوسری جانب احتساب عدالت نے مسعود غنی اور گواہ عبدالرحمن کو بھی ریکارڈ سمیت آج دوبارہ پیشی کا حکم دیا تھا جن کا بیان پہلے ہی ریکارڈ کیا جا چکا ہے۔

گواہ عبدالرحمن نے اسحاق ڈار کی 2005 سے2017 تک آمدن کا ریکارڈ فراہم کردیا جس کے بعد عدالت نے گواہ عبدالرحمن اور مسعود غنی کو جانے کی اجازت دے دی۔

نیب پراسیکیوٹر نے آئندہ سماعت پر9 گواہوں کو پیش کرنے کی استدعاکی تاہم عدالت نے5 گواہوں کو طلبی کے لیے سمن جاری کردیے۔

علاوہ ازیں احتساب عدالت نے آج اسحاق ڈار کے ضامن احمد علی قدوسی کو طلب کررکھا تھا، سماعت کے آغاز پر جب انہیں طلب کیا گیا تو وہ غیرحاضر تھے۔

عدالت نے اسحاق ڈار کے ضامن احمد علی قدوسی کی منقولہ جائیدار قرق کرنے کا حکم دیتے ہوئے رپورٹ 18 دسمبر تک جمع کرانےکا حکم دیا اور سماعت بھی 18 دسمبر تک ملتوی کردی۔

خیال رہے کہ اسحاق ڈار کے ضامن احمد علی قدوسی کو آج 50 لاکھ روپے کے زرِ ضمانت جمع کرانے تھے جو جمع نہ کرانے پرعدالت نے جائیداد کی قرقی کا حکم دیا۔


آمدن سے زائد اثاثہ جات ریفرنس کیس ، اسحاق ڈار اشتہاری قرار


یاد رہے کہ تین روز قبل احتساب عدالت نے آمدن سے زائد اثاثہ جات ریفرنس کیس میں سابق وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو اشتہاری قرار دے دیا تھا۔

احتساب عدالت نے اسحاق ڈار کے ضامن کو50 لاکھ روپے زرضمانت 3 دن میں جمع کرانے کا حکم دیتے ہوئے کہا تھا کہ زرضمانت جمع نہ کرانے پر جائیداد ضبط کرلی جائے گی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں