The news is by your side.

Advertisement

لاہور: ضمانت خارج ہونے پرملزم کی خودکشی کی کوشش

لاہور : لاہور ہائی کورٹ میں ملزم نے  ضمانت خارج ہونے پر زہر کھا لیا، پولیس اور عدالتی عملے نے ایمرجنسی 1122 کی ایمبولینس کے ذریعے تشویش ناک حالت میں ملزم کو اسپتال منتقل کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں خالدہ نامی خاتون کی اپنے منہ بولے باپ پر دھوکا دہی کے ذریعے رقم ہتھیانے کی مقدمے کی سماعت جسٹس شہرام سرور کی عدالت میں ہوئی۔

سماعت کے دوران خالدہ نامی خاتون نے عدالت کو بتایا کہ تاج محمد نے اسے بیٹی بنایا ہوا تھا اور وقتاً فوقتاً رقم لیتا رہتا تھا اس طرح ملزم نے ساڑھے تین لاکھ روپے ہتھیا لیے بعد ازاں فراڈ کے ذریعے لی گئی رقم وصول کرنے کا جعلی اسٹامپ پیپر لکھوا لیا جس پر تھانہ نصیر آباد میں مقدمہ درج کرایا تھا۔

lahore-post-1

ملزم تاج محمد نے اپنے جوابی بیان میں دعویٰ کیا کہ اس نے پیسے واپس کر دیے ہیں مدعی خاتون نے مزید رقم حاصل کرنے کے لیے مجھ پر جھوٹا مقدمہ درج کروایا ہے تاکہ مجھے دباؤ میں لے کر مزید رقم ہتھیالی جائے۔

عدالت نے دونوں جانب کے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد ملزم کی درخواستِ ضمانت مسترد کرکے پولیس کو ہدایت جاری کی کہ ملزم کو گرفتار کر کے تحقیقات مکمل کر کے عدالت کو آگاہ کیا جائے تاکہ انصاف کے تقاضوں کو پورا کیا جائے۔

lahore-post-2

عدالت کی جانب سے ضمانت مسترد ہونے کے بعد ملزم نے عدالت سے نکلتے ہی اچانک زہریلی گولیاں کھا لیں جس سے اس کی حالت غیر ہو گئی،موقع پر وہاں موجود پولیس اہلکاروں اور عدالتی عملے نے ملزم کو اٹھا کر 1122 کی ایمبولینس کے ذریعے سروسز اسپتال منتقل کر دیا۔

ملزم کے زہر کھانے کے بعد اس کی بیوی اور بیٹی نے آہ وزاری اور سینہ کوبی کرتے ہوئے مدعی خاتون خالدہ کو زدوکوب کیا اور عدالت کے باہر شدید ہنگامہ آرائی بھی کی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں