The news is by your side.

Advertisement

ایکٹیمرا انجیکشن بلیک میں فروخت کرنے والے گروہ کا اہم رکن گرفتار

راولپنڈی: کرونا وائرس انفیکشن کے علاج کے لیے استعمال کیا جانے والا ایکٹیمرا انجیکشن بلیک میں فروخت کرنے والے گروہ کا ایک اہم رکن گرفتار کر لیا گیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق اسپیشل برانچ راولپنڈی نے ایک کارروائی میں Actemra انجیکشن کی بلیک میں فروخت کرنے والے گروہ کا اہم رکن گرفتار کر لیا، گروہ سے متعلق معلوم ہوا ہے کہ یہ پورے پاکستان میں پھیلا ہوا ہے۔

ڈی ایس پی اسپیشل برانچ طاہر انیس نے بتایا کہ عوامی شکایات کے اندراج کے بعد ٹیکنیکل آلات کی مدد سے گروہ کے رکن کو ٹریس کیا گیا، یہ گروہ Actemra انجیکشن بلیک مارکیٹ میں حکومت کی طرف سے مقرر کردہ قیمت سے 6 سے 8 گنا زیادہ داموں پر بیچ رہا تھا۔

‘پلازمہ اور ڈیکسا میتھاسون اور ایکٹیمرا کرونا کا علاج نہیں’

خیال رہے کہ منافع خور مافیا جوڑوں کے درد کے ضرورت مند مریضوں اور کرونا کے تشویش ناک مریضوں کی مجبوریوں کا مسلسل فائدہ اٹھا رہا ہے، طبی ماہرین کی جانب سے یہ دعویٰ سامنے آنے کے بعد کہ ٹوسیلو زومیب انجیکشن کرونا کے مریضوں کے لیے مفید ہے، پاکستان میں اس مافیا نے مارکیٹ سے اس انجیکشن ہی کو غائب کر دیا تھا، اور اب اسے نہایت مہنگے داموں بیچا جا رہا ہے۔

بتایا گیا ہے کہ مذکورہ گروہ راولپنڈی، پشاور اور کراچی میں پھیلا ہوا ہے، آج اسپیشل برانچ راولپنڈی کی نشان دہی پر راولپنڈی پولیس اور محکمہ صحت نے مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے پر اس گروہ کے ایک رکن کو پکڑا۔

پولیس نے مذکورہ مافیا رکن کے خلاف مقدمہ درج کرنے کے بعد مزید تفتیش شروع کر دی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں