کراچی: کچی آبادیوں‌ میں‌ غیرقانونی تعمیرات مسمار کرنے کا فیصلہ illegal construction
The news is by your side.

Advertisement

کراچی: کچی آبادیوں‌ میں قائم غیرقانونی تعمیرات مسمار کرنے کا فیصلہ

کراچی: سندھ حکومت نے کچی آبادیوں میں غیر قانونی تعمیرات اور عمارات کو مسمار کرنے کا فیصلہ کرلیا جس کے لیے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی اور کچی آبادی کا خصوصی سیل قائم کردیا گیا۔

اے آر وائی نیوز کے نمائندے انجم وہاب کے مطابق سندھ حکومت نے کچی آبادیوں میں قائم غیر قانونی تعمیرات کو مسمار کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے اس ضمن میں کارروائی کے لیے خصوصی سیل قائم کردیا ہے جس کے سربراہ ڈائریکٹر کچی آبادی عبدالغنی جوکھیو اور ڈائریکٹر سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی ہوں گے۔

اطلاعات کے مطابق ایس بی سی اے اور کچی آبادی مشترکہ غیر قانونی عمارات کے خلاف کارروائی کریں گی۔


وزیر اعلی سندھ کے معاون خصوصی مرتضیٰ بلوچ نے بتایا کہ کچی آبادیوں میں غیر قانونی لیز شدہ پلاٹوں اور فلیٹس کو مسمار کیا جائے گا، قبضہ مافیہ عناصر کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

معاون خصوصی برائے کچی آبادی کے مطابق غیر قانونی بلند عمارات تعمیر کرکے عوام کو فروخت کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن ہوگا، کچی آبادیوں کے مکینوں کو بلڈر مافیا سے نجات دلائیں گے۔


یہ بھی پڑھیں: کراچی میں واقع کچی بستیاں، امن و امان کے لیے سنگین خطرہ


ان کا مزید کہنا تھا کہ قبضہ مافیا بلڈر کی وجہ سے حکومت کے ریونیو کو نقصان پہنچ رہا ہے، قبضہ مافیا کو کچی آبادیوں میں قبضوں کی بلکل اجازت نہیں دیں گے، کراچی کے عوام کچی آبادیوں میں بننے والے فلیٹس یا عمارات میں سرمایہ کاری نہ کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں