جمال خاشقجی کے قتل میں حکومت ملوث نہیں‘ سعودی وزیرخارجہ -
The news is by your side.

Advertisement

جمال خاشقجی کے قتل میں حکومت ملوث نہیں‘ سعودی وزیرخارجہ

واشنگٹن: سعودی وزیربرائے خارجہ امورعادل الجبیر کا کہنا ہے کہ ولی عہد نے حکم دیا، نہ ہی حکومت جمال خاشقجی کے قتل میں ملوث ہے۔

تفصیلات کے مطابق واشنگٹن میں نیوز چینل کو انٹرویومیں سعودی وزیرخارجہ عادل الجبیرنے کہا کہ جمال خاشقجی کے قتل کے الزام میں گیارہ افراد پر فرد جرم عائد کی جاچکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ گرفتارافراد سے صحافی کی لاش کے متعلق تفتیش کی جارہی ہے، جمال خاشقجی کی لاش کہاں ہے، سعودی حکومت تاحال لاعلم ہے۔

سعودی وزیربرائے خارجہ امورنے کہا صحافی کے قتل کیس کے پراسیکیوٹرکوترکی سے ابھی تک شواہد نہیں ملے ہیں۔

عادل الجبیر نے مزید کہا کہ ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے حکم دیا، نہ ہی حکومت جمال خاشقجی کے قتل میں ملوث ہے۔

جمال خاشقجی قتل کیس، کسی کو ہمیں ڈکٹیٹ کرنے کی ضرورت نہیں، عادل الجبیر

یاد رہے کہ دو روز قبل سعودی وزیر برائے خارجہ امور عادل الجبیر کا کہنا تھا کہ جمال خاشقجی قتل کی تحقیقات کے سلسلے میں کسی کو ہمیں ڈکٹیٹ کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے

عادل الجبیر کا کہنا تھا کہ سعودی عرب جانتا ہے کہ تحقیقات کس طرح کرنی ہیں اس کیس میں مزید ڈکٹیشن برداشت نہیں کی جائے گی۔

جمال خاشقجی سے متعلق سعودی ٹرائل اقوام متحدہ نے ناکافی قرار دے دیا

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ 5 فروری کو اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ادارے نے سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل سے متعلق سعودی عرب کے ٹرائل کو ناکافی قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ اس طرح کے ٹرائل سے شفافیت کا جائزہ نہیں لیا جاسکتا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں