The news is by your side.

Advertisement

آسٹریا : ایڈولف ہٹلرکی جائے پیدائش منہدم کرنے کا فیصلہ

ویانا : تاریخ میں ظالم کے نام سے مشہور سابق جرمن آمر ایڈولف ہٹلر کا مکان گرانے کی تیاریاں کر لی گئیں،آسٹریا کی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ اس عمارت کو نازیوں کا مرکز بننے سے بچانے کے لیے منہدم کرنا ضروری ہے، اس حوالے سے قانون سازی بھی کی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق سابق جرمن آمر ایڈولف ہٹلر کی آسٹریا میں اس رہائش گاہ کو منہدم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جہاں وہ پیدا ہوا، مکان پر حکومت اور اس کی مالکن کے درمیان تنازعہ چل رہاتھا۔

حکومت کا کہنا ہے کہ اس اقدام کا مقصد اس عمارت کو نازیوں کا مرکز بننے سے بچانا ہے۔ یہ گھر جو پہلے ایک گیسٹ ہاؤس تھا اس کے مستقبل کے بارے میں ملک میں بحث کی جا رہی ہے۔ جس میں اسے گرانے یا اس کے استعمال میں تبدیلی پر بات کی جا رہی ہے۔

یہ بحث اس وقت زیادہ سنجیدہ ہوئی جب مکان کی مالکن نے اسے بیچنے سے انکار کر دیا تھا۔ اخبار ڈائے پریسی کے مطابق ملک کے وزیر داخلہ ولف گینگ سوبوتکا نے ماہرین کی ٹیم سے کہا کہ انہوں نے اس گھر کو مہندم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اخبار کا مزید کہنا ہے کہ یہاں بنائی جانے والی نئی عمارت انتظامی امور یا پھر فلاحی کاموں کے لیے استعمال میں لائی جائے گی۔ اس گھر کی مالکن نے جو کہ اب ریٹائرڈ ہو چکی ہیں۔

اس تین منزلہ عمارت کو حکومت کے ہاتھ بیچنے سے متعدد بار انکار کیا۔ مگر اب یہ توقع کی جا رہی ہے کہ آسٹریلیا کی پارلیمان جلد ہی اس مکان کا قبضہ اس کی مالکن سے لینے کا قانون پاس کرے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں