The news is by your side.

Advertisement

رینجرز کیخلاف گمشدگی کے اشتہارات شائع کرانے والا ڈی ایس پی معطل

کراچی : صوبائی وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال نے پولیس کی جانب سے نامعلوم رینجرزکے خلاف گمشدگی کے اشتہارات کا نوٹس لے لیا، اشتہار شائع کرانے والے ڈی ایس پی اورنگی ٹاؤن کو معطل کردیا گیا۔

اخبارات میں اورنگی ٹاؤن اور مومن آباد سے چھ گمشدہ افراد اور ان کی تصاویر شائع کی گئی تھیں، جس میں نامعلوم رینجرز کا ذکر کیا گیا تھا، جس کا پولیس حکام اور صوبائی وزیر داخلہ سندھ نے نوٹس لیتے ہوئے فوری طور پر ڈی ایس پی اورنگی ٹاؤن فخرالاسلام کو معطل کرتے ہوئے واقعے کی انکوائری کا حکم دیا۔

وزیرداخلہ سندھ سہیل انور سیال نے اس ضمن میں آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی سے فون پر رابطہ کیا اور ان اشتہارات کی اشاعت کے حوالے سے مکمل تحقیقات کرانے کی ہدایات جاری کیں اور تحقیقاتی کمیٹی بنا دی ہے جو 3روز میں رپورٹ پیش کرے گی۔

شائع ہونے والے اشتہارات میں کہا گیا ہے کہ نامعلوم رینجرز اہلکار مذکورہ شخص کو اٹھاکر لے گئے، جس کا تاحال پتہ نہیں چل رہا، اگر کسی کو اشتہار میں دیے گئے شخص کا علم ہو تو مومن آباد اورنگی ٹاؤن میں اطلاع دی جائے ۔

یہ اشتہار ڈی ایس پی اورنگی فخرالاسلام عثمانی کی جانب سے دیا گیا ہے، جو سید نادر شاہ ،فواد شمس،احسان اللہ، طاہر علی، ابرار احمد اور حیدر علی کے لاپتہ ہونے سے متعلق ہے، رینجرز اہلکاروں پر جو شق لگائی گئی ہے ، اس دفعہ کے تحت سزا سات سال تک ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں