The news is by your side.

Advertisement

دھمکی آمیز خط جعلی ثابت ہوا تو سیاست چھوڑ دونگا، عمران خان کے ساتھی کا اعلان

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے امور نوجوانان عثمان ڈار نے کہا ہے کہ دھمکی آمیز خط جعلی ثابت ہوا تو سیاست چھوڑ دونگا۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام الیونتھ آور میں شریک وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے امور نوجوانان نے کہا ہے کہ دھمکی آمیز خط حقیقت ہے اگر یہ جعلی ثابت ہوا تو میں ہمیشہ کیلیے سیاست چھوڑ دوں گا۔

عثمان ڈار نے دوران پروگرام ہی شریک دوسرے مہمان بی اے پی رہنما خالد مگسی کو پیشکش کی کہ اگر دھمکی آمیز یہ دستاویز آپ کو دکھادیں تو کیا آپ اپنا حکومت سے علیحدگی اور اپوزیشن سے اتحاد کرنے کا فیصلہ بدل لیں گے۔ مجھے امید ہے کہ خالد مگسی کا جو بھی فیصلہ ہوگا وہ ملک اور قوم کے مفاد میں ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ میں تو کہہ رہا ہوں کہ اگر دھمکی آمیز دستاویز غلط ثابت ہوئی تو میں ہمیشہ کیلیے سیاست چھوڑ دونگا لیکن اگر یہ خط درست ثابت ہوا تو کیا مفتاح اسماعیل سیاست چھوڑ دینگے۔

عثمان ڈار نے کہا کہ دھمکی آمیز خط ایک انتہائی سنجیدہ معاملہ ہے، یہ قطری خط نہیں بلکہ تصدیق کیلئے ہم نے چیف جسٹس کو دکھانے کی آفر کی ہے۔ یہ دھمکی آمیز مراسلہ دوسرے ملک کی جانب سے آیا ہے اور یہ دستاویز تحریک عدم اعتماد سے ایک دن پہلے بھیجا گیا ہے۔ دستاویز میں واضح کہا گیا ہے کہ عمران خان کو نہیں چھوڑیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اس دستاویز میں بھی اپوزیشن کو نالائق ہی لکھا گیا ہے یعنی دھمکی دینے والوں کو بھی اپنے سہولت کاروں پر اعتماد نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان آزاد خارجہ پالیسی کی بات کرتے ہیں اسی لیے بہت مخالفت ہے اور اپنے نظریے پر کھڑا رہنے کی ہی وہ قیمت ادا کررہے ہیں۔ کیا امریکی صدر بائیڈن رجیم چینج کی باتیں نہیں کر رہا۔ عمران خان واضح کہہ چکے ہیں کہ کبھی جھکوں گا اور نہ اپنی قوم کو جھکنے دوں گا۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے نے مزید کہا کہ پاور پلے میں اپوزیشن اچھا کھیلی اب ہماری باری ہے۔ چوکے چھکےمار رہے ہیں، ایم کیو ایم سے متعلق بھی کل تک خوشخبری مل جائیگی۔

عثمان ڈار نے دعویٰ کیا کہ تحریک عدم اعتماد پانچ یا چھ ووٹوں سے ناکام ہوجائے گی، ایم کیو پاکستان اور باقی دیگر اتحادی بھی ہمارا ساتھ دینگے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں