The news is by your side.

Advertisement

دوست مزاری کا دعویٰ غلط ہے، ایڈووکیٹ جنرل پنجاب

ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی کے دعوی سے متعلق ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کا موقف سامنے آگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اےآر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب احمد اویس نے دوست محمد مزاری کے دعوے کو غلط قرار دیتے ہوئے کہا کہ میں نے سپریم کورٹ میں آج الیکشن ہونے کا کوئی بیان نہیں دیا، عدالت عظمیٰ میں صرف اتنا کہا تھا کہ اسپیکر جو ہوگا آئین کے مطابق فیصلہ کرے گا۔

ایڈووکیٹ جنرل پنجاب نے کہا کہ عدالت عظمیٰ کوبتایا تھا کہ امن وامان کی صورتحال پر اسپیکر نے پنجاب اسمبلی کا اجلاس ملتوی کیا، مجھ سے مشاورت کا دوست مزاری کا دعویٰ غلط ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب اسمبلی آمد پر دوست محمد مزاری کے ساتھ کیا ہوا؟

ایڈووکیٹ جنرل پنجاب احمد اویس کا کہنا تھا کہ آج کے اجلاس کی کوئی قانونی حیثیت نہیں تھی اور نہ ہی مجھ سے کوئی مشاورت کی گئی تھی۔

واضح رہے کہ اے آر وائی نیوز کے پروگرام ‘آف دی ریکارڈ’ میں گفتگو کرتے ہوئے ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی دوست محمد مزاری کا کہنا تھا کہ تین اپریل کو پنجاب اسمبلی میں نئے قائدایوان کےانتخاب کیلئے ووٹنگ ہوناتھی تاہم کشیدہ صورت حال کے باعث اجلاس ملتوی کردیا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ 6 اپریل کو دوبارہ سیشن ہونا تھامگر ن لیگ نے سپریم کورٹ میں پٹیشن داخل کی، جہاں سپریم کورٹ میں اے جی پنجاب نےکمٹمنٹ کی تھی، کمٹنمنٹ کےمطابق چھ اپریل کوپنجاب اسمبلی کا اجلاس بلانا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں