The news is by your side.

Advertisement

افغانستان سے ازبکستان، اب افغان پائلٹوں کی اگلی منزل کونسی؟، فیصلہ ہوگیا

تاشقند: کابل پر طالبان کے قبضے کے باعث ازبکستان منتقل ہونے والے افغان پائلٹوں سے متعلق اہم فیصلہ کیا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق امریکا اور ازبکستان کے درمیان ایک نئے معاہدے کے تحت افغان پائلٹوں کے ایک گروپ کو رواں ہفتے کے آخر میں ازبکستان سے ایک امریکی فوجی اڈے میں منتقل کیے جانے کی توقع ہے۔

دی وال اسٹریٹ جرنل نے اپنی رپورٹ میں کہا کہ افغان فضائیہ کے پائلٹوں کو ممکنہ طور پر دوحہ میں امریکی فوجی اڈے لے جایا جائے گا، تاہم یہ واضح نہیں ہے کہ آخر پائلٹوں کو امریکا منتقل کیا جائے گا یا نہیں، اگست کے وسط میں طالبان کے کابل پر قبضے کے بعد ازبکستان چلے گئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں: سابق وزیر خارجہ کا عالمی ممالک کو طالبان حکومت کے حوالے سے مشورہ

رپورٹ میں کہا گیا کہ طالبان نے سرکاری عہدیداروں اور فوج کے ارکان کو معافی دینے کا وعدہ کیا ہے ، لیکن پائلٹوں کو اب بھی اپنی حفاظت کے بارے میں خدشات ہیں، وہیں پائلٹوں کو حوالے کرنے کے لیے ازبک حکومت پر طالبان کا دباؤ بھی ہے۔

رپورٹ کے مطابق اس وقت ازبکستان میں چھیالیس طیارے ہیں اور عملے اور ان کے خاندانوں سمیت کل پانچ سو پچاسی افراد ہیں۔

دوسری جانب طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے پائلٹوں سے اپیل کی ہے کہ وہ افغانستان واپس جائیں کیونکہ ملک کوخود کی تعمیرنو کے لئے اپنے لوگوں کی ضرورت ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں