The news is by your side.

Advertisement

افغانی وکٹ کیپر ٹیم سے نکالے جانے پر آبدیدہ، بورڈ نے سازش کی، محمد شہزاد

کابل : افغانستان کی کرکٹ ٹیم کے بیٹسمین اور وکٹ کیپر محمد شہزاد نے کہا ہے کہ مجھے کوئی انجری نہیں ہے زبردستی ٹیم سے نکالا گیا، وہ میڈیا سے گفتگو کرتے یوئے آبدیدہ ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان کرکٹ ٹیم کے وکٹ کیپر اور بیٹسمین محمد شہزاد کو زبردستی ٹیم سے باہر کردیا گیا۔ شہزاد جب انگلینڈ سے کابل پہنچے تو  انتہائی افسردہ نظر آئے ۔

انہوں نے روتے ہوئے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا انہیں کوئی انجری نہیں ہے کپتان نے انہیں زبردستی ٹیم سے باہر کیا ہے۔ 32سالہ کرکٹر کا مزید کہنا تھا کہ ٹیم میں سیاست ہے،جس کی وجہ سےباہر کیا گیا حالانکہ میں مکمل طور پر فٹ تھا۔

نیوزی لینڈ کے خلاف میچ سے قبل ٹریننگ سیشن کے بعد جب میں نے اپنا موبائل فون چیک کیا تو اس خبر کا پتہ چلا کہ میں گٹھنے کی انجری کے باعث عالمی کپ سے باہر ہو گیا ہوں۔

مجھ سمیت دیگر کھلاڑی بھی اس خبر سے لا علم تھے جب انہیں یہ خبر معلوم ہوئی تو وہ بھی حیران رہ گئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں