افغانستان: طالبان نے پارلیمانی انتخابات کو ناکام بنانے کے لیے حملے شروع کردیے
The news is by your side.

Advertisement

افغانستان: طالبان نے پارلیمانی انتخابات کو ناکام بنانے کے لیے حملے شروع کردیے

کابل: افغانستان میں پارلیمانی انتخابات کو ناکام بنانے کے لیے طالبان نے حملے شروع کردیے، ایک خود کش حملے میں 8 افراد ہلاک ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق افغان طالبان نے دھمکی دے رکھی ہے کہ کسی صورت افغانستان میں رواں ماہ ہونے والے پارلیمانی انتخابات کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق افغان صوبے ہیلمند میں ایک انتخابی امیدوار پر خود کش حملہ ہوا جس کے باعث 8 افراد ہلاک جبکہ دس زخمی ہوگئے۔

خود کش حملہ آور نے انتخابی امیدار کے دفتر میں گھس کر خود کو دھماکے سے اڑا لیا، جس کے نتیجے میں آٹھ افراد کی ہلاکتیں ہوئیں، حکام نے ہلاکتوں کی تصدیق کردی۔

افغانستان میں پارلیمانی انتخابات، طالبان نے حملے کی دھمکی دے دی

گذشتہ روز طالبان نے اپنے دھمکی بھرے بیان میں کہا ہے کہ رواں ماہ 20 اکتوبر کو افغانستان میں انتخابات ہونے نہیں دیں گے، اگر کسی نے اسے کامیاب بنانے میں حصہ لیا تو اسے نہیں چھوڑا جائے گا۔

دوسری جانب افغان حکام نے دھمکیوں کے پیش نظر ملک میں سیکیورٹی سخت کردی ہے، ملک میں قائم ہزاروں پولنگ اسٹیشن پر تقریباً پچاس ہزار سیکیورٹی اہلکار تعینات کیے جائیں گے۔

اقوام متحدہ کی ایک رپورٹ کے مطابق رواں سال یکم جنوری سے 30 ستمبر تک افغانستان میں خود کش حملوں میں 3634 افراد مارے گئے، ہلاک ہونے والوں میں عورتیں اور بچے بھی شامل ہیں۔

یاد رہے کہ گذشتہ ماہ افغانستان کے صوبے بغلان میں طالبان نے سیکیورٹی فورسز کی چوکیوں پر حملہ کردیا تھا جس کے نتیجے میں 30 سیکیورٹی اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں