site
stats
پاکستان

افغانستان میں چھپے دہشت گردوں کی فہرست افغان حکام کے حوالے

اسلام آباد: پاک فوج نے افغان حکام سے افغانستان میں چھپے 76 دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کر دیا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ افغان حکام کو باور کروا دیا کہ دہشت گردوں کے خلاف فوری طور پر خود ایکشن لیں یا پاکستان کے حوالے کریں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان نے افغانستان کو شر پسندی میں ملوث دہشت گردوں کے نام تھما دیے۔ پاکستان نے دو ٹوک مطالبہ کیا ہے کہ دہشت گردوں کے خلاف فوری کارروائی کرو یا ہمارے حوالے کیے جائیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کے مطابق افغان سفارتخانے کے حکام کو جی ایچ کیو طلب کرلیا گیا۔ حکام کو افغانستان میں چھپے 76 دہشت گردوں کی فہرست دیتے ہوئے مطالبہ کیا گیا کہ دہشت گردوں کے خلاف فوری ایکشن لیا جائے یا پھر پاکستان کے حوالے کیا جائے۔

اس سے قبل دہشت گردی کے واقعے کے بعد آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دو ٹوک کہا تھا کہ افغانستان میں دہشت گرد منظم ہو کر ہمارے معاشرے میں مایوسی پھیلانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ قوم کے خون کے ایک ایک قطرے کا فوری حساب لیں گے۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز سیہون شریف میں حضرت لعل شہباز قلندر کی درگاہ پر خوفناک خودکش دھماکے میں 75 افراد شہید اور 150 کے قریب زخمی ہوگئے تھے۔ جاں بحق افراد میں 20 بچے، 9 خواتین، 45 مرد اور ایک پولیس اہلکار شامل ہیں۔

اس سے قبل دفتر خارجہ نے افغانستان کے نائب سفیر کو بھی طلب کیا تھا۔ پاکستان نے 13 فروری کو لاہور میں ہونے والے خودکش دھماکے میں افغان سرزمین استعمال ہونے پر شدید احتجاج کیا تھا۔

یاد رہے لاہور کے مال روڈ پر چیئرنگ کراس کے مقام پر ہونے والے خودکش بم دھماکے میں ڈی آئی جی ٹریفک اور ایس ایس پی سمیت 14 افراد شہید اور 70 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top