The news is by your side.

Advertisement

افغان خاتون شربت گلہ 14روزہ ریمانڈ پر جیل منتقل

پشاور : جوڈیشل مجسٹریٹ نے افغان خاتون شربت گلہ کو چودہ روزہ ریمانڈ پرجیل بھیج دیا، جعلی شناختی کارڈکیس میں گرفتارشربت گلہ بی بی نے صحت جرم سے انکار کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جعلی شناختی کارڈ حاصل کرنے کے الزام میں گرفتار افغان خاتون شربت گلہ کو عدالت میں پیش کیا گیا جہاں عدالت نے شربت گلہ کو چودہ روزہ ریمانڈ پرجیل بھیج دیا جبکہ گرفتارشربت گلہ بی بی نے صحت جرم سے انکار کردیا ہے۔

afghan

یاد رہے 26 اکتوبر کو پشاور کے علاقے نوتھیہ میں ایف آئی اے نے کاروائی کرکے شربت بی بی کو گرفتار کرلیا تھا، جس پر غیر قانونی طریقے سے پاکستانی شناختی کارڈ بنانے کا الزام ہے، ایف آئی اے کے مطابق شربت بی بی نے اپنی دو بیٹیوں کے بھی جعلی شناختی کارڈ بنوائے تھے۔


مزید پڑھیں : پشاور: سبزآنکھوں والی افغان خاتون شربت بی بی گرفتار


اس سے قبل شربت بی بی کے خاندان کو شناختی کارڈ بنا کر دینے کے الزام میں نادرا کے تین اہلکاروں کو پہلے ہی معطل کیا جا چکا ہے۔

سبز آنکھوں سے شہرت پانے والی شربت گلہ کا تعلق افغانستان سے ہے ،جو افغان جنگ کے بعدانیس سو چوراسی میں اپنے خاندان کے ساتھ پاکستان آگئی تھی، شربت گلہ اپنی خوبصورت آنکھوں کے باعث شہرت کی بلندیوں پر اس وقت پہنچی جب نیشنل جیو گرافک میگزین کے کور پیج پر اس کی تصویر شائع ہوئی۔

afgha-2

اے آر وائی پر خبر نشر ہونے کے بعد نادرا حکام تحقیقات کے بعد اس بات کی تصدیق کی ہے کہ عالمی الیکٹرانک میڈیا پر شہرت پانے والی افغانی خاتون شربت بی بی نے اپریل 2014 میں پشاور کے نواحی علاقے سے پاکستانی شناختی کارڈ حاصل کر لیا تھا۔


مزید پڑھیں : افغان خاتون شربت بی بی کو شہریت دینے پرنادرا افسران کی معطلی


تحقیقات کے بعد پتہ چلا ہے کہ نادرا کے ڈپٹی اسسٹنٹ پشاور اور دو دیگر اعلیٰ افسران شربت بی بی اور اُس کے دو بیٹوں کو رشوت کے عوض پاکستانی شہریت دینے میں ملوث پائے گئے تھے، جس کے بعد تینوں افسران روپوش ہوگئے، جن کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں