The news is by your side.

Advertisement

افغان حکومت نے 900 طالبان قیدیوں کو رہا کر دیا

کابل: افغانستان میں عارضی جنگ بندی کے آخری روز اہم پیش رفت سامنے آئی ہے، افغان حکومت نے طالبان کے 900 قیدیوں کو رہا کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان میں نو سو طالبان قیدیوں کو رہا کر دیا گیا، بدلے میں افغان طالبان نے بھی جلد بڑی تعداد میں حکومتی قیدیوں کو رہا کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔

رپورٹس کے مطابق طالبان قیدیوں کو بگرام اور پُل چرخی جیل سے رہا کیا گیا، افغان طالبان نے عید کے لیے جنگ بندی کا اعلان کیا تھا جس کے بعد افغان حکومت نے 2 ہزار طالبان قیدی رہا کرنے کا اعلان کیا تھا۔

افغانستان کی نیشنل سیکورٹی کونسل کے ترجمان جاوید فیصل کے مطابق فی الوقت 900 قیدیوں کو رہا کیا گیا ہے، جس پر افغان طالبان کی جانب سے خیر مقدم کیا گیا۔

افغان صدر کا 2 ہزار طالبان قیدیوں کو رہا کرنے کا حکم

طالبان ترجمان سہیل شاہین کا کہنا تھا کہ افغان حکومت کی جانب سے 900 قیدیوں کی رہائی اچھی پیش رفت ہے، افغان طالبان بھی جلد بڑی تعداد میں حکومتی قیدیوں کو رہا کریں گے۔

واضح رہے کہ 23 مئی کو افغان حکومت اور طالبان کی جانب سے عیدالفطر کے موقع پر تین روزہ جنگ بندی کے اعلان کے بعد صدر اشرف غنی نے 2 ہزار طالبان قیدیوں کی رہائی کا حکم دیا تھا، افغان صدر کے ترجمان کا کہنا تھا کہ طالبان کی 3 روزہ جنگ بندی کے جواب میں قیدیوں کو رہا کیا جا رہا ہے، حکومت نے یہ فیصلہ خیر سگالی کی جانب ایک قدم قرار دیا۔

امریکا اور طالبان کے مابین فروری میں طے پانے والے تاریخی معاہدے کے تحت افغان حکومت 5 ہزار طالبان قیدی اور طالبان ایک ہزار سیکورٹی اہل کار رہا کرنے کے پابند ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں