The news is by your side.

Advertisement

افغان طالبان نے 10 مغوی فوجیوں کو 6 سال بعد رہا کردیا

کابل: افغانستان کی حکومت کے ترجمان نے تصدیق کی ہے کہ طالبان نے جذبہ خیرسگالی کے تحت 6 سال قبل اغوا کیے جانے والے  افغان فوج کے 10 اہلکاروں کو رہا کردیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق طالبان نے 6 سال قبل افغان فوج کے 10 اہلکاروں کو اغوا کیا تھا جنہیں انٹرنیشنل کمیونٹی فار ریڈ کراس کی کاوش کے بعد رہائی ملی۔

آئی سی آر سی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ طالبان نے تمام اہلکاروں کو صوبے ہل مند کے ضلع نہر سراج میں افغان حکام کے حوالے کیا جس کے بعد رہائی پانے والے تمام مغویوں کو حفاظتی مقام پر پہنچایا گیا۔

مزید پڑھیں: امریکا کا طالبان کی قید سے آسٹریلوی اور امریکی پروفیسرز کی بازیابی کا خیرمقدم

یاد رہے کہ چند روز قبل افغان طالبان نے اپنی ساتھیوں کی رہائی کے بعد دو غیرملکی پروفیسرز کو رہا کیا تھا، وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پروفیسرز کی رہائی پاکستان کی کاوشوں کا نتیجہ ہیں۔ بین الاقوامی سطح پر طالبان کے اس اقدام اور پاکستان کے کردار کو سراہا گیا تھا۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق طالبان نے امریکی اور آسٹریلوی پرفیسرز کو تین سال قبل اغوا کیا تھا، افغان صدر اشرف غنی نے غیرملکی مغویوں کے بدلے طالبان کے تین رہنماؤں کو رہا کرنے کا اعلان کیا تھا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں