The news is by your side.

امریکی فوج کے انخلا کو ایک سال مکمل، افغانستان میں جشن کا سماں

کابل : افغانستان سے غیرملکی افواج کے انخلا کا ایک سال مکمل ہونے پر ملک میں جشن کا سماں ہے، طالبان اپنی فتح کے اس اہم دن پر خوشیاں منا رہے ہیں۔

افغان دارالحکومت کابل کو رنگ برنگی لائٹوں سے روشن کیا گیا ہے جب کہ آج بروز بدھ کو ملک بھر میں عام تعطیل ہے۔

منگل کی شب کابل میں آسمان آتش بازی سے جگما اٹھا اور طالبان جنگجوؤں کی جانب سے ہوائی فائرنگ بھی کی گئی جس کی متعدد ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہیں۔

کابل میں تین سلطنتوں کے خلاف فتوحات کا جشن منانے کے بینرز آویزاں کیے گئے ہیں، ان سلطنتوں میں سابق سوویت یونین اور برطانیہ بھی شامل ہیں۔

سرکاری عمارتوں اور اسٹریٹ لائٹس پر طالبان کے سینکڑوں سفید پرچم لگائے گئے ہیں۔ دارالحکومت کابل میں سابق امریکی سفارت خانے کے قریب مسعود اسکوائر پر طالبان سفید پرچم اٹھائے دکھائی دیے جب کہ وہ شہر بھر میں گاڑیوں کے ہارن بجاتے ہوئے گشت کرتے رہے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق امریکی فوج کی قیادت میں نیٹو افواج 20 سال تک افغانستان میں رہیں، اس دوران شدید لڑائی بھی دیکھنے کو ملی اور ان کے نکلنے پر طالبان نے اقتدار سنبھالا تھا۔

افغانستان کے نئے حکمرانوں اپنے سخت گیر موقف پر مشتمل ضابطے پھر سے نافذ کیے ہیں، جن کو ابھی تک کسی کی جانب سے تسلیم نہیں کیا گیا ہے جبکہ عملی طور پر خواتین کو عوامی زندگی سے خارج کر دیا گیا ہے۔

دوسری جانب تمام تر پابندیوں اور انسانی بحران کے باوجود افغانستان کے بہت سے شہریوں کا کہنا ہے کہ وہ غیرملکی افواج چلی گئیں جن کی وجہ سے طالبان کی شورش میں اضافہ ہوا تھا۔

یاد رہے کہ گزشتہ 20 برس تک مقابلہ کرنے کے بعد طالبان اپنا ملک آزاد کراوانے میں کامیاب ہوئے، پچھلے سال غیرملکی فوجیوں کے انخلا سے دو ہفتے قبل طالبان نے حکومتی افواج کے خلاف شدید حملے گئے اور اقتدار پر قبضہ کر لیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں