جعلی بینک اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ، کورنگی کا رکشہ ڈرائیور بھی ارب پتی نکلا rikshaw driver
The news is by your side.

Advertisement

جعلی بینک اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ، کورنگی کا رکشہ ڈرائیور بھی ارب پتی نکلا

کراچی: جعلی بینک اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ کا سلسلہ جاری ہے، کراچی کے علاقے کورنگی کے رکشہ ڈرائیور کے اکاؤنٹ سے 3 ارب سے زائد کی ٹرانزیکشن کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق جعلی بینک اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ کا ایک اور کیس سامنے آیا ہے، شہر قائد کے علاقے کورنگی کے رکشہ ڈرائیور رشید کے اکاؤنٹ سے 3 ارب سے زائد کی ٹرانزیکشن ہوئی۔

رکشہ ڈرائیور نے جے آئی ٹی کو بیان ریکارڈ کرادیا، رشید اکاؤنٹ اور ٹرانزیکشن سے لاعلم تھا، رشید کو بیان ریکارڈ کرانے کے لیے ایک روز پہلے طلب کیا گیا تھا۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز سلمان لودھی کے مطابق رکشہ ڈرائیور رشید کورنگی چار نمبر کا رہائشی ہے، کرائے کے مکان میں رہائش پذیر ہے، ایف آئی اے ان کے اکاؤنٹ کو مانیٹر کررہی تھی، تمام ٹرانزیکشن دو سال قبل کی گئی تھیں۔

مزید پڑھیں: ایک اور شہری کے اکاؤنٹ سے کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشن کا انکشاف

واضح رہے کہ سیالکوٹ کے رہائشی نوجوان مذاکر حسین شاہ کے جعلی اکاؤنٹ میں کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشن سامنے آئی تھی، اس کا انکشاف اس وقت ہوا جب وہ اکاؤنٹ کھلوانے بینک گیا، شہری کے اکاؤنٹ سے مجموعی طور پر 7 کروڑ 44 لاکھ 76 ہزار 322 روپے کی ٹرانزیکشن کی گئی تھی۔

یاد رہے چند روز قبل کراچی کے علاقے کورنگی ڈھائی نمبر کی رہائشی ایک خاتون ثروت زہرا کے جعلی بینک اکاؤنٹ کا انکشاف ہوا تھا، جس میں کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشن کی گئی تھی۔

اس سے قبل حیدرآباد کے رہائشی پردیپ کمار کے اکاؤنٹ میں چار کروڑ 99 لاکھ 54 ہزار 432 روپے جبکہ شہر قائد کے رہائشی فالودہ فروش عبدالقادر کے اکاؤنٹ میں 2 ارب روپے کی موجودگی کا انکشاف ہوا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں