ریٹائرمنٹ کے بعد نواز شریف سے ملنے جاؤں گا، ممنون حسین Mamnoon Hussain
The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف کو ریلیف نہیں دے سکتا، ریٹائرمنٹ کے بعد ملنے جاؤں گا، ممنون حسین

لندن : صدر ممنون حسین نے کہا ہے کہ ریٹائر ہونے کے بعد نواز شریف سے ملنے جاؤں گا، اعتراض کرنے والوں کو اعتراض کرنے سے کون روک سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سربراہ مملکت ممنون حسین نے لندن میں صحافیوں کی جانب سے کیے گئے سوال اعتراض ہورہا ہے آپ عدالتوں میں مطلوب افراد سے ملے؟ کا جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک جرم ثابت نہ ہوجائے کسی کو مجرم نہیں کہا جاسکتا۔

پاکستان کے صدر ممنون حسین کا کہنا تھا کہ ذاتی تعلقات کی وجہ سے ان لوگوں سے ملا، اعتراض کرنے والوں کو اعتراض کرنے سے کون روک سکتا ہے۔

سربراہ مملکت کا کہنا ہے کہ دھاندلی کے الزامات پر الیکشن کمیشن تمام جماعتوں کو مطمئن کرے، سابق وزیر اعظم نواز شریف کو ریلیف دینے میں کوئی کردار ادا نہیں کر سکتا، ریٹائر ہونے کے بعد نواز شریف سے ملنے جاؤں گا۔

خیال رہے صدر ممنون حسین کی آئینی مدت 9 ستمبر 2018 کو پوری ہورہی ہے۔

یاد رہے صدر مملکت ممنون حسین کا رائل کالج آف فزیشن ایڈنبرا کی دعوت پر برطانیہ پہنچنے پر لندن ائیرپورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ‘اللہ کا قانون ہے بدعنوانی کرنے والا کچھ دن بچتا ہے مگر پھر پکڑا جاتا ہے‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ پاناما پر جو بیان دیا تھا اُس کا اندازہ تھا مگر پاکستان میں جو احتساب کا عمل شروع ہوا وہ ٹھیک تو ہے مگر کچھ خامیاں بھی ہیں لیکن اب پاکستان پیچھے نہیں آگے کی طرف بڑھتے ہوئے مزید ترقی کرے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں