The news is by your side.

Advertisement

ٹرمپ کی دھمکی کام کر گئی، مودی گھٹنے ٹیکنے پر مجبور

نئی دہلی : بھارت نے امریکی صدر کی دھمکی کے بعد کورونا وائرس کے علاج کیلئے ملیریا کی دوا فراہم کرنے پر
رضا  مندی ظاہر کردی ہے، بھارت نے دواکی برآمدپرپابندی عائد کررکھی تھی۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے بھارت کو دھمکی دی تھی کہ اگر ہائیڈروکسی کلورو کوئن دوا امریکا کونہ بھیجی توجوابی کارروائی کریں گے، مودی سے دوا کی کھیپ بھیجنے پربات کی ہے، بھارت امریکا سے فائدہ اٹھاتا رہا ہے۔

صدرٹرمپ نے ملیریا کے خلاف موثردوا ہائڈروکسی کلوروکوین کو کورونا وائرس کیخلاف جنگ میں گیم چینجرقراردیا ہے جبکہ بھارت نے دوا کی ایکسپورٹ پرپابندی عائدکررکھی ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کی دھمکی کے بعد بھارت امریکا کو ملیریا کی دوافراہم کرنے پر رضا مند ہوگیا۔

بھارتی وزارت خارجہ سے جاری بیان میں کہا گیا کہ بھارت نے ملیریا کی دوا ہائیڈروکسی کلورو کوئن کو امریکا برآمد کرنے کا فیصلہ کیا ہے، بھارت ہائیڈوکسی کلوروکوئن کو مناسب مقدار میں ان پڑوسی ممالک کو فروخت کرے گا جن کا انحصار ہماری صلاحیتوں پر ہے۔

یاد رہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کرونا ٹاسک فورس کے ہمراہ روٹین کی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ ملیریا کی دوائی کام کربھی سکتی ہے اور نہیں بھی لیکن کرونا وائرس کی ویکسین کو کئی برس تک ٹیسٹ کرنے کا وقت نہیں۔

خیال رہےہائیڈروکسی کلورو کوئن ایک پرانی اور سستی دوا ہے، جسے جنگ عظیم دوم کے وقت استعمال کیا گیا تھا، یہ سنکونا درخت کی چھال سے تیار کی جاتی ہے۔

ہائیڈروکسی کلورو کوئن کو ملیریا کے مریضوں کے لیے استعمال کیا جاتا ہے لیکن یہ دوا کورونا وائرس کے علاج میں کسی حد تک مددگار ثابت ہورہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں