The news is by your side.

Advertisement

اگر افتخار چوہدری چیف جسٹس ہوتے تو وہ اب تک وزیراعظم کے منصب پر بیٹھ جاتے، بلاول بھٹو

اسلام آباد : پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہاہے اگر اس وقت افتخار چوہدری چیف جسٹس ہوتے تو خود کو وزیر اعظم کے منصب پر فائز کرلیتے۔ یہ بات انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہی۔

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے ملک میں حکمرانوں کی غیر موجودگی پر شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ ’’ملک میں اس وقت نہ وزیراعظم موجود ہیں اور نہ ہی وزیرخارجہ،جبکہ وزیر اعلٰی شہباز شریف بھی بیرون ملک میں مقیم ہیں‘‘۔

اپنے ٹوئٹ میں ان کا کہنا ہےکہ ’’ یہ اچھی بات ہے کہ اس وقت افتخار چوہدری چیف جسٹس نہیں ہیں ورنہ وہ خود کو وزیراعظم کے منصب پر فائض کرلیتے‘‘۔

دوسری جانب دو روز قبل سابق چیف جسٹس آف پاکستان افتخار محمد چوہدری نے حکومت سے مطالبہ کیا تھا کہ ملک میں آئینی بحران سے بچنے کے لیے وزیر اعظم کی غیر موجودگی میں فوری طور پر کسی دوسرے شخص اس منصب پر نامزد کیا جائے۔

اس حوالے سے انہوں نے مزید کہا تھا کہ جنگ اور ایمرجنسی کی صورت میں اگر وزیر اعظم خود کسی دوسرے شخص کو  وزیر اعظم کے لیے منتخب کر کے ملکی صدر کو اپنی یہ تجویز ارسال کریں تو آئینی راستہ اختیار کرتے ہوئے اُس شخص کو وزارتِ عظمیٰ کے منصب پر فائز کیا جاسکتا ہے۔ 

مزید پڑھیں : آئینی بحران سے بچنے کیلئے نئے وزیراعظم کی تقرری کی جائے، سابق چیف جسٹس

واضح رہے وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف کی آج لندن میں ہونے والی سرجری کامیاب ہوئی ہے، جس پر اُن کی صاحبزادی نے اپنے ٹوئٹ کے ذریعے پیغام دیا ہے کہ ’’اللہ کے شکر سے آپریشن کامیاب ہوگیا ہے، اللہ رب العزت میرے والد کو صحت و تندرستی کے ساتھ لمبی زندگی عطاء فرمائے‘‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں