سی پیک فٹ بال کی مانند کیچ ہے، امکان نہیں ڈراپ ہو جائے، احسن اقبال
The news is by your side.

Advertisement

سی پیک فٹ بال کی مانند کیچ ہے، امکان نہیں ڈراپ ہو جائے، احسن اقبال

لاہور : وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ ایوب، مشرف اور ضیاالحق کے دور میں مصنوعی خوشحالی پیدا کی گئی تو معیشت تباہ ہو گئی، سی پیک فٹ بال کی مانند کیچ ہے، امکان نہیں ڈراپ ہو جائے اگر یہ بھی ڈراپ ہو جائے تو کوئی پرسان حال نہ ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں سی پیک کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ سی پیک فٹ بال کی مانند کیچ ہے، امکان نہیں ڈراپ ہو جائے، اگر یہ بھی ڈراپ ہو جائے تو کوئی پرسان حال نہ ہو گا، ہم نے ماضی میں بہت مواقع ضائع کئے، تیسری بار موقع ملا ہے۔

انہوں نے کہا کہ معاشی ٹیک آف لیا تو 65 جنگ نے معاشی طور پر زمین بوس کر دیا، نواز شریف کے پہلے دور میں سات فیصد گروتھ ریٹ حاصل کیا تو دو سالوں میں حکومت لپیٹ دی گئی۔ ایوب، مشرف اور ضیاالحق کے دور میں مصنوعی خوشحالی پیدا کی گئی جب جیو اسٹریٹیجک تھیٹر استعمال کیا تو معیشت تباہ ہو گئی۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ 99 اور9/11 کے بعد ڈالرز ضائع کئے،2013 میں ہمیں دنیا کا سب سے خطرناک ملک قرار دیا گیا، دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہ کہا گیا۔ ایک خطرناک سے پرامن اور محفوظ ملک بنایا، اسے تبدیلی کہیں گے جو آ چکی ہے۔

احسن اقبال نے کہا کہ 66 سال سیاسی نظریات کا پیچھا کرتے ضائع کئے جیو پولیٹکس کا شکار ہوئے، بیسویں صدی نظریات اور اکیس ویں صدی معاشی اقتصادی نظریات کی صدی ہے۔


مزید پڑھیں : پاکستانی مفادات کے خلاف کوئی سازش ہوئی توجواب دیں گے‘ احسن اقبال


انکا کہنا تھا کہ نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈصفدر کانام ای سی ایل میں ڈالنےکا فیصلہ میرٹ پرکریں گے،ای سی ایل کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال نہیں ہونے دیں گے، پیپلزپارٹی کےلوگوں نےای سی ایل سےفائدہ اٹھایا، ہم نے پیپلزپارٹی کے لوگوں کے نام ای سی ایل سے نکالے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ کہا جارہا تھا سینیٹ الیکشن نہیں ہوں گےلیکن ہونےجارہےہیں، عام انتخابات بھی اپنے وقت پرہی ہوں گے، عبوری سیٹ اپ 60روزسےزائدہوگاتوخدشات بڑھیں گے۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ شیخ رشید اورعمران خان برانڈعوام نےمستردکردیاہے، پاکستان کےعوام صرف ترقی کےبرانڈ کوسپورٹ کرتی ہے، عوام چاہتےہیں کہ ترقی کی پالیسیوں کوجاری رکھاجائے۔

انھوں نے مزید کہا کہ دہشتگردی کی واچ لسٹ میں پاکستان کانام ڈالناسیاسی عمل ہے، دہشتگردی کےخلاف جنگ امریکااوربرطانیہ نہیں ہمارےلیےہے، آنےوالی نسلوں کوپرامن پاکستان دےکرجاناچاہتےہیں، ہماری قربانیوں کوعالمی ادارے تسلیم کررہے ہیں۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کواین ایف سی میں حق دینا چاہیے، وفاق بہت قربانی دےچکاہےاب صوبوں کوبھی دل بڑاکرناہوگا، صوبے بجٹ کا کچھ حصہ آزاد کشمیر، فاٹا اور گلگت بلتستان کے لئے نکالیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں