site
stats
اہم ترین

خواجہ آصف کے بعد احسن اقبال کا اقامہ بھی منظرعام پر آگیا

اسلام آباد : پاناما کے بعد اقامہ کے ہنگامے نے ہلچل مچا دی ہے، نواز شریف ،خواجہ آصف کے بعد احسن اقبال بھی سعودی عرب کی کمپنی کے ملازم نکلے۔

تفصیلات کے مطابق پاناما انکشافات نے اقاموں کی پٹاری کھول دی ہے اور ایک کے بعد ایک حکومتی وزیر عرب ملکوں کا ملازم نکل رہا ہے، وفاقی وزیر دفاع کے بعد وفاقی وزیر برائے ترقی و منصوبہ بندی کا اقامہ بھی منظر عام پر آگیا ہے۔

جس کے مطابق احسن اقبال مدینہ منورہ کی کمپنی میں ملازم ہیں ، جس میں ان کا پیشہ مارکیٹنگ اسپیشلسٹ لکھا گیا ہے، یہ اقامہ 21جنوری 2013میں جاری ہو ا، جس کی مدت دسمبر 2014میں ختم ہوئی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وفاقی وزیر احسن اقبال نے اپنے پیغام میں مدینے کے اقامے کو اپنے لئے باعث فخرقراردیا اور کہا کہ 2004 سے 2006تک مدینہ منورہ میں کام کیا، کام چھوڑنے کے بعد بغیر کسی تنخواہ کے اقامہ رکھا۔


مزید پڑھیں : خواجہ آصف وفاقی وزیر ہونے کے ساتھ دبئی کمپنی کے ملازم نکلے


گذشتہ روز وزیر دفاع خواجہ آصف کا اقامہ بھی منظر عام پر آیا تھا، سیالکوٹ سے خواجہ آصف کے حلقے سے پی ٹی آئی کے امید وار عثمان ڈار نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر خواجہ آصف کے اقامے کی کاپی جاری کی تھی، جس کے مطابق خواجہ آصف بھی دبئی کی کمپنی میں ملازم ہیں۔

تاہم وزیر دفاع خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ میں نےاقامہ 27سال سے الیکشن کمیشن اور ایف بی آر میں ڈکلیئر کیا ہوا ہے، 1983 سے بینکنگ چینلز کے ذریعے پیسہ وصول کرتا ہوں، ابو ظہبی میں1983سے بینک اکاؤنٹ بھی موجود ہے۔

اد رہے اس سے قبل پاناما جے آئی ٹی نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا تھا کہ وزیراعظم دبئی کی کمپنی کے ملازم تھے، جس کے لیے دبئی کی لاء فرم نے بھی وزیراعظم نوازشریف کے کیپٹل ایف زیڈ ای کمپنی میں ملازم ہونے کے دستاویزات کی تصدیق کی تھی۔

اقامہ کیا ہے ؟

خلیجی ممالک میں غیر ملکیوں کو طویل مدت رہائش کے لئے ملنے والے اجازت نامے کو اقامہ کہتے ہیں۔

سعودی عرب عرب، امارات ، بحرین،  کویت،  قطر سمیت تمام خلیجی ممالک میں لاکھوں افراد بسلسہ ملازمت یا کاروبار مقیم ہیں، خلیجی ممالک غیر ملکی محنت کشوں اور کاروباری افراد کو طویل قیام کا اجازت نامہ یعنی اقامہ جاری کرتے ہیں۔

اقامہ رکھنے والوں کو آنے جانے کے لئے خلیجی ملک کا ویزا نہیں لینا پڑتا، اقامہ دیکھ کر پاسپورٹ پر داخلے کی مہر لگا دی جاتی ہے، اقامہ عام طور پر دو سال کیلئے جاری کیا جاتا ہے جس کے ختم ہونے پر ری نیو کرایا جا سکتا ہے۔

کفیل اقامے کے سارے انتظامات کا ذمےدارہوتا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top