The news is by your side.

Advertisement

لیگی رہنما احسن اقبال پر بڑی مشکل آن پڑی

لاہور: احتساب عدالت نے نارووال اسپورٹس سٹی ریفرنس میں سابق وفاقی وزیر احسن اقبال کی بریت کی درخواست مسترد کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج سید اصغر علی نے احسن اقبال کی نیب ریفرنس سے بریت کی درخواست پر محفوط شدہ فیصلہ سناتے ہوئے لیگی رہنما کی بریت کی درخواست مسترد کردی۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت میں ہونے والی قومی احتساب بیورو نیب کے ریفرنس کی سماعت میں احسن اقبال کے وکیل ذوالفقارعباس نقوی نے بریت کی درخواست پر دلائل مکمل کیے تھے۔

انہوں نے عدالت میں کہا کہ نیب ذاتی کرپشن کا کوئی بھی ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہا، منصوبے میں نیب کوئی بےضابطگی ثابت نہیں کرسکا، ذوالفقار عباس نقوی کا کہنا تھا کہ ریفرنس اور گرفتاری کا مقصد صرف احسن اقبال کی کردار کشی کرنا تھا، احسن اقبال کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: نیب نے مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال کے الزامات کو مسترد کردیئے

وکیل صفائی نے کہا کہ نارووال اسپورٹس سٹی عوامی مفاد کا منصوبہ تھا، منصوبے کی منظوری سی ڈی ڈبلیو پی سمیت متعلقہ فورمز نے دی تھی، عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد احسن اقبال کی بریت کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے سماعت 23 فروری تک ملتوی کردی تھی۔

واضح رہے کہ احتساب عدالت نے نارووال اسپورٹس سٹی کیس میں احسن اقبال پر فرد جرم عائد کررکھی ہے۔

یاد رہے کہ نیب نے احسن اقبال کے خلاف نارووال اسپورٹس سٹی کمپلیکس کی تعمیر میں اختیارات کے غلط استعمال کا ریفرنس دائر کر رکھا تھا جس کے خلاف سابق وفاقی وزیر نے بریت کی درخواست دائر کی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں