The news is by your side.

انصار الشریعہ پر پابندی لگانے کا فیصلہ کرلیا ہے: وزیر داخلہ

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ انصار الشریعہ کا سرغنہ اور 4 مرکزی کردار گرفتار ہوچکے ہیں، تنظیم پر پابندی لگانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اہم اجلاس منعقد ہوا۔

اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے بتایا کہ انصار الشریعہ کا سرغنہ گرفتار ہو چکا ہے۔ ان کے مطابق تنظیم پر پابندی لگانے کا فیصلہ کیا جا چکا ہے۔

مزید پڑھیں: انصار الشریعہ کا سربراہ افغانستان سے تربیت یافتہ

احسن اقبال نے مزید بتایا کہ انصار الشریعہ سے متعلق ڈی جی رینجرز سے بریفنگ لی ہے، پورے نیٹ ورک کو جلد بریک کرلیں گے۔

انہوں نے کہا کہ انصار الشریعہ کے 4 مرکزی کرداروں کو بھی گرفتار کیا جا چکا ہے۔ کچھ عناصر کا پیچھا جاری ہے انہیں بھی جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ نیشنل ایکشن پلان کو بہتر طریقے سے چلانا ہے اور پڑھے لکھے نوجوانوں کو دہشت گردی کی لعنت سے روکنا ہے۔ ’ہم نے تمام وزرائے اعلیٰ کی میٹنگ بھی کی تھی جس میں فیصلہ ہوا کہ وفاق المدارس کا بنایا فارم لازمی پر کروایا جائے گا‘۔


ایم کیو ایم کو سیاسی آزادی حاصل

وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم پاکستان سمیت تمام جماعتوں کو سیاسی آزادی ہے۔ کسی بھی پر تشدد گروہ یا جماعت کو اشتعال انگیزی کی اجازت نہیں۔

انہوں نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی پاکستان کے حوالے سے تقریر کے متعلق کہا کہ ٹرمپ نے تقریر کی لیکن روس، چین اور یورپی ممالک نے ہماری تائید کی۔


 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں