The news is by your side.

Advertisement

سفر سے محروم لوگوں کو طیارے میں ملنے والا کھانا اب گھر پر ملے گا

ماسکو: ایک روسی ایئر لائن نے سفر سے محروم لوگوں کو ‘سفر کا ذائقہ’ فراہم کرنے کے لیے انوکھا قدم اٹھا لیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق روسی ایئر لائن یورال نے کرونا وائرس لاک ڈاؤن کی وجہ سے سفر سے محروم لوگوں کو پرواز میں دیا جانے والا کھانا گھروں پر فراہم کرنا شروع کر دیا ہے۔

ایئر لائن کا کہنا تھا کہ لوگ اس سنسنی خیز احساس کو یاد کرتے ہوں گے جب وہ جہاز کے اندر سیٹ پر بیٹھے ہوتے ہیں اور کھانے کی ٹرالی سیٹوں کے درمیان گزرنے لگتی ہے، اس لیے انھوں نے لوگوں کو گھروں سے نکلے بغیر ‘سفر کا ذائقہ’ فراہم کرنے کا فیصلہ کیا۔

اس سلسلے میں ایئرلائن کی جانب سے ماسکو، پیٹرزبرگ اور یکاٹرنبرگ میں صارفین کو پرواز والے کھانے فراہم کیے جانے لگے ہیں، جن میں چکن، بڑا گوشت اور مچھلی کی ڈشز شامل ہیں، اس کے علاوہ پروزا میں دیے جانے والے اورنج، ایپل اور ٹمیٹو جوسز بھی صارفین کو گھروں پر فراہم کیے جا رہے ہیں۔

ایئر لائن کے مطابق یہ کھانا لوگوں کو روایتی ایئرلائن ٹرے ہی میں فراہم کیا جا رہا ہے، جس سے انھیں ویسا ہی احساس ملتا ہے سوائے فضائی منظر کے۔

واضح رہے کہ ماسکو میں ایئر لائن بزنس کلاس چکن ڈش کا ریٹ 1250 روبل (16.65 ڈالرز) جب کہ اکانومی کلاس کا کھانا 550 روبل (7.33 ڈالرز) پر ملتا ہے۔ ادھر روسی ایئر ٹرانسپورٹ آپریٹرز کی تنظیم نے کہا ہے کہ روس میں گزشتہ ماہ ایئر لائن کی نشست بُک کرنے کی شرح میں 92 فی صد کمی واقع ہوئی تھی۔

خیال رہے کہ روس میں گزشتہ روز کرونا وائرس کیسز کی تعداد میں ریکارڈ اضافہ ہوا ہے، جس سے ملک میں کرونا کیسز 1 لاکھ 14 ہزار سے بھی بڑھ گئے ہیں، جب کہ وائرس سے ہونے والی اموات کی تعداد 1,169 ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں