The news is by your side.

Advertisement

شریف خاندان لاڈلے ہیں ان کے ساتھ نرم رویہ رکھا جاتا ہے، اعتزاز احسن

کراچی: پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ شریف خاندان لاڈلے ہیں ان کے ساتھ نرم رویہ رکھا جاتا ہے، پیپلزپارٹی کی تاریخ میں کوڑے، پھانسیاں، گیارہ سال کی قید ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام ’سوال یہ ہے‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کیا، اعتزاز احسن نے کہا کہ کیپٹن (ر) صفدر اپنی گرفتاری کو سیاسی رنگ دینا چاہتے تھے، ان کے ساتھ 500 لوگوں کا ٹولا شروع سے آخر تک وہی تھا۔

اعتزاز احسن نے کہا کہ شریف خاندان، سپریم کورٹ پر حملہ کرتا ہے مگر ان پر آنچ تک نہیں آتی، ایک بھائی نے لاہور سے بسیں بھر کر بھیجی دوسرے نے استقبال کیا، بی بی شہید نے پانچ سال قید کاٹی تھی۔

انہوں نے کہا کہ شریف فیملی نے اپنا دفاع نہیں کیا اس لیے سزا لازم تھی، شریف فیملی روزانہ ان اپارٹمنٹ میں جاکر رہتی ہے، ان کے دونوں اشتہاری بیٹے کہتے ہیں ہم برطانیہ کے شہری ہیں یہ کیسے بیٹے ہیں جو اپنے باپ اور بہن کو پیشیاں بھگتواتے رہے۔

پیپلزپارٹی رہنما نے کہا کہ عدالت میں کیلبری فونٹ کی جو دستاویز دی گئی وہ بھی جعلی نکلی، جعلسازی پر سزا تو ہوتی ہے، یہ اپنے بیٹوں کو بچاتے رہے، شریف خاندان لندن میں بیٹھا ہے ان کو بڑی رعایت ملی ہے، ای سی ایل میں نام نہیں ڈالا گیا، کس ملزم کو یہ سہولت ملتی ہے۔

اعتزاز احسن نے کہا کہ شریف خاندان کو بہت رعایت ملی جس کا یہ فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں، ان کے پاس گرفتاری دینے کے سوا کوئی آپشن نہیں ہے، شریف خاندان کی گرفتاری کے وقت فوج بلا کر ایئرپورٹ کو حصار میں لینا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ کیپٹن (ر) صفدر نے آج کوشش کی مزاحمت جیسا کوئی واقعہ ہو مگر ناکامی ہوئی، پراسیکیوشن نے جو ثابت کرنا تھا وہ شریف خاندان نے خود تسلیم کرلیا، برطانیہ، امریکا اور بھارت میں بھی انسداد رشوت ستانی کا قانون موجود ہے جبکہ جو رشوت سے پیسہ کماتا ہے وہ اپنے نام پر نہیں رکھتا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔ 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں