The news is by your side.

Advertisement

افغانستان کی بے قابوصورتحال خطے کی سیکیورٹی خطرےمیں ڈال رہی ہے،اعزاز چوہدری

واشنگٹن : امریکا میں تعینات پاکستانی سفیر اعزاز چوہدری نے افغانستان مں عدم استحکام کو پاکستان کیلئے خطرہ قرار دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق واشنگٹن میں امریکی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے امریکہ میں تعینات پاکستانی سفیر نے افغانستان کی بے قابو صورتحال کو پاکستان کی سیکیورٹی اور معیشت کیلئے بڑاخطرہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ افغانستان کی بے قابوصورتحال خطے کی سیکیورٹی خطرےمیں ڈال رہی ہے۔

اعزاز چوہدری نے کہا افغانستان میں دہشت گردی بڑھ رہی ہے، داعش تیزی سے پنجے گاڑ رہی ہے، دونوں ممالک کے سفارتی اور تجارتی تعلقات متاثر ہوسکتے ہیں۔

پاکستانی سفیر کا کہنا تھا کہ پاکستان کا حقانی نیٹ ورک اور طالبان سے کوئی تعلق نہیں، وہ ہمارے عوام کے خیالات کی نمائندگی نہیں کرتے، پاکستان کو جہادیوں کا گڑھ سمجھنے کی باتیں قصہ پارینہ بن چکی ہیں۔


مزید پڑھیں :  پاکستان کی سرزمین کسی ملک کےخلاف استعمال نہیں ہونےدیں گے، اعزازچوہدری


اعزاز چوہدری نے کہا کہ 2014 تک ہر ماہ پاکستان میں ایک سو پچاس حملے ہوتے تھے، آج دہشت گردی کا نمبر سنگل ہندسوں میں بھی نہیں، نوازحکومت نے قبائلی علاقوں میں آپریشن کرکے دہشت گردوں کو مار بھگایا، پاکستان میں دہشت گرد گروہوں کیلئے جگہ تنگ کر دی گئی ہے۔

انھوں نے سیاسی حل پر زور دیتے ہوئے کہا غنی حکومت کو طالبان سے بھی مذاکرات کرنے چاہیئے، پاکستان ٹرمپ انتظامیہ کی افغان پالیسی کا انتظارکر رہا ہے۔

اعزاز چوہدری نے کہا کہ اسامہ بن لادن کیخلاف آپریشن کے بعد سے اب تک واشنگٹن سے تعلق بہت مضبوط ہو چکے ہیں، گزشتہ دو دہائیوں میں امریکہ نے پاکستان کو دو ارب ڈالرز امداد دی، اعزاز چوہدری امداد کا زیادہ تر حصہ فوج کیلئے رکھا گیا۔

انکا کہنا تھا کہ پاکستان موسمیاتی تبدیلی کے معاہدے کا بڑا حمایتی ہے، ہمالیہ گلیشئرز کے پگھلنے سے پاکستان میں بڑے سیلاب کا خطرہ ہے، پاکستان میں تیزی سے معاشی ترقی آرہی ہے۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں