The news is by your side.

Advertisement

صدر آزاد کشمیرنےمسئلہ کشمیرکےحل کےلیے6 نکاتی ایجنڈا پیش کردیا

واشنگٹن : صدرآزاد جموں و کشمیرسردار مسعود خان کا کہنا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حل میں تمام اسٹیک ہولڈرز کو مذاکرات میں شامل کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق صدرآزا د کشمیر مسعود خان نے پاک امریکی کانگرس سے خطاب کے دوران مسئلہ کشمیرکے حل کے لیے 6 نکاتی ایجنڈا پیش کردیا۔

صدرآزاد جموں و کشمیرسردار مسعود خان کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی کونسل جموں وکشمیرمیں استصواب رائے یا ریفرنڈم کرائے۔

مسعود خان نے کہا کہ یواین آبزورگروپ ایل اوسی پرانسانی حقوق کی خلاف ورزیاں روکے، بھارت مقبوضہ کشمیر کو متنازعہ علاقہ تسلیم کرے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر سے اپنی فوجیں واپس بلائے اور مقبوضہ کشمیر سے کالے قوانین ختم کرے۔

صدرآزاد جموں و کشمیرسردار مسعود خان کا کہنا ہے کہ بھارت اقوام متحدہ انسانی حقوق کونسل کو مقبوضہ وادی میں رسائی دے، مسئلہ کشمیر کے حل میں تمام اسٹیک ہولڈرز کو مذاکرات میں شامل کیا جائے۔


کشمیریوں کی تحریک آزادی کو بھارت کمزورنہیں کرسکتا‘ مسعود خان

خیال رہے کہ گزشتہ روز واشنگٹن میں امریکی اور پاکستانی صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں روکنے کے لیے امریکہ کردارادا کرے۔

مسعود خان کا کہنا تھا کہ 70سال سے جاری کشمیریوں کی تحریک آزادی کو بھارت کمزور نہیں کرسکتا، کشمیریوں کی جدوجہد کو دہشت گردی کا رنگ دے کربھارت عالمی برادری کوگمراہ نہیں کرسکتا۔


بھارت کشمیریوں کی پرامن اورغیرمسلح جدوجہد آزادی کودبانا چاہتا ہے‘ مسعود خان

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ صدر آزاد جموں و کشمیرسردار مسعود خان کا کہنا تھا کہ بھارتی قابض افواج کی جانب سے قتل وغارت اورظلم و بربریت کے باوجود کشمیری اپنے پیدائشی حق، حق خودارادیت حاصل کرنے سے کبھی پیچھے نہیں ہٹیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں