The news is by your side.

Advertisement

اجمل وزیر کی مبینہ آڈیو منظر عام پر آگئی

پشاور : مشیراطلاعات خیبرپختونخوا اجمل وزیر کوعہدے سے ہٹانے کیلئے جس آڈیو کا الزام عائد کیا گیا تھا وہ آڈیو ٹیپ آے آر وائی نیوز کو موصول ہوگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق مشیراطلاعات خیبرپختونخوا اجمل وزیر کی وہ مبینہ آڈیو منظر عام پر آگئی ہے جس کی وجہ سے انہیں عہدے سے ہٹایا گیا، مبینہ آڈیو میں سنا جاسکتا ہے کہ اشتہارات پر ٹیکسز کی مد میں چھوٹ پر بات ہوئی، مبینہ آڈیو میں ٹیکس چھوٹ کو کمیشن میں تبدیل کرنے کی بات کی جارہی ہے۔

واضح رہے کہ خیبر پختونخواہ حکومت نے مشیراطلاعات خیبرپختونخوا اجمل وزیر کو عہدے سے ہٹاتے ہوئے کامران بنگش کو مشیراطلاعات کے پی کی اضافی ذمہ داری سونپ دی ہے، کامران بنگش کے پاس بلدیات کا قلمدان بھی ہے۔

اس حوالے سے معاون خصوصی کامران بنگش کا کہنا ہے کہ مبینہ آڈیو لیک پر وزیراعلیٰ نے بروقت اور واضح نوٹس لیا، شفافیت برقرار رکھنے کے لئے اجمل وزیر کو عہدے سے ہٹایا گیا، مبینہ آڈیو کا فرانزک تجزیہ کیا جائے گا۔

مزید پڑھیں: مشیراطلاعات خیبرپختونخوا اجمل وزیر کو عہدے سے ہٹا دیا گیا

ان کا کہنا ہے کہ اگر اجمل وزیر بے گناہ ثابت ہوئے تو دوبارہ ٹیم کا حصہ ہوں گے، وزیراعلیٰ نے چیف سیکرٹری کو اعلیٰ سطح انکوائری مقرر کرنے کا حکم دیا ہے، مجھ سے منسوب دیگرخبروں کی تردید کرتا ہوں۔

واضح رہے کہ 3 مارچ 2020 کو وزیراطلاعات شوکت یوسف زئی کو ان کے عہدے سے ہٹا کر اجمل وزیر کو یہ عہدہ سونپا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں