وزیر اعظم اور وزیراعلیٰ مطمئن نہ ہوں، تو وزرا کو تبدیل کر سکتے ہیں: علیم خان
The news is by your side.

Advertisement

وزیر اعظم اور وزیراعلیٰ مطمئن نہ ہوں، تو وزرا کو تبدیل کر سکتے ہیں: علیم خان

لاہور: سینئر  وزیر پنجاب علیم خان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم اور وزیراعلیٰ مطمئن نہ ہوں، تو وزرا کو تبدیل کر سکتے ہیں.

تفصیلات کے مطابق میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے علیم خان کا کہنا تھا کہ وزیر یا ذمے دار سے بہتر آپشن ہو، تو  اسے تبدیل کیا جا سکتا.

ن لیگ سے پوچھتا ہوں، 2008 میں آپ کی حکومت تھی، کرپٹ تھا، تو میری کرپشن پرپردہ کیوں ڈالا، کیا ن لیگ والے 11 سال میری کرپشن کاتماشا دیکھ رہے تھے

علیم خان

انھوں نے کہا کہ وزیراعظم وزرا کی کارکردگی کا جائزہ لے رہے ہیں، وزیراعظم نے عوام سے جو وعدےکیے، وہ ترجیحات 100 دن میں شامل ہیں، ترجیحات پرعمل درآمد کو وزیراعظم اور وزیراعلیٰ خود مانیٹرکر رہے ہیں.

علیم خان نے کہا کہ ن لیگ سے  پوچھتا ہوں،  2008 سے پیپلزپارٹی اور آپ کی حکومت تھی، کرپٹ تھا، تو میری کرپشن پرپردہ کیوں ڈالا، کیا ن لیگ والے 11 سال میری کرپشن کاتماشا دیکھ رہے تھے.


مزید پڑھیں: عمران خان کے وژن کے تحت پنجاب حکومت آگے بڑھ رہی ہے، عبدالعلیم خان


سینئروزیرپنجاب علیم خان نے کہا کہ نومبر2015 میں میرےخلاف انکوائری شروع ہوئی، میرے پاس کیا اختیار اور کون سا عہدہ تھا؟ میرا  قصور صرف یہ تھا کہ میں نے ن لیگ کےخلاف الیکشن لڑا.

انھوں‌ نے کہا کہ 30 سال حکمرانی کرنے والوں‌ کی کرپشن کو میرے ساتھ ملایا جارہا ہے، 2015 میں بالکل بے اختیار اوراپوزیشن میں تھا.

انھوں‌ نے کہا کہ ن لیگ والوں نے اپنے مخالفین کے خلاف کیس بنائے، آپ ایک کیس ایسا بتا دیں، جو عمران خان نے انتقام کے طورپرشروع کیا ہو،شہباز شریف اور حمزہ شہباز 2015 میں میرے خلاف انکوائری کوغلط کہتے تھے.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں