The news is by your side.

Advertisement

تحریک انصاف کے رہنما علیم خان کو جیل سے رہا کردیا گیا

لاہور : پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علیم خان کو کوٹ لکھپت جیل سے رہا کردیا گیا ، شعیب صدیقی نے کہا علیم خان کے خلاف نیب کوئی ثبوت پیش نہ کرسکی، نیب قوانین میں ترامیم کی ضرورت ہے ۔

تفصیلات کے مطابق ایم پی اے شعیب صدیقی روبکار لے کر کوٹ لکھپت جیل پہنچ گئے، روبکار جیل حکام نے موصول کئے ، جس کے بعد علیم خان کو جیل سے رہا کردیا گیا۔

اس سے قبل پاکستان تحریک انصاف کے سینئیر رہنما عبدالعلیم نے عدالتی فیصلے کے مطابق 10 ، 10 لاکھ روپے کے مچلکے جمع کرائے تھے ، مچلکے احتساب عدالت میں جمع کرائےگئے۔

بعد ازاں احتساب عدالت نے ضمانتی مچلکوں کی تصدیق کاعمل مکمل ہونے علیم خان کی رہائی کے روبکارجاری کردیئے، پی ٹی آئی رہنما شعیب صدیقی کا کہنا تھا علیم خان نے پہلے دن استعفیٰ دیكر مثال قائم كی، آج رہا ہوگئے، جس نے كرپشن كی اسے ضرور پكڑیں مگر پہلے تحقیقات كریں ، علیم خان كو نہ صرف اہلخانہ بلکہ لوگوں كی خدمت سے دورركھاگیا۔

گزشتہ روز لاہور ہائی کورٹ نے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علیم خان کے ضمانت کیس کا 9 صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ جاری  کیا تھا ،  تحریری فیصلے میں عدالت نے قرار دیا تھا کہ علیم خان کی درخواست ضمانت منظور کی جاتی ہے، علیم خان دس دس لاکھ روپے کے دو ضمانتی مچلکے جمع کرائیں۔

عدالت نے قرار دیا کہ انویسٹمنٹ کرنے والے کسی شخص نے عبدالعلیم خان کے خلاف بطور گواہ بیان نہیں دیا۔ علیم خان کے اثاثے ان کی وزارت سے پہلے یا بعد کے ہیں اس دوران کے نہیں۔

 مزید  پڑھیں:  عبدالعلیم خان کی ضمانت منظور، رہائی کا حکم

عدالتی فیصلے کے مطابق برطانیہ میں علیم خان کے فلٹیس بارے میں ابھی تک ٹھوس شواہد سامنے نہیں آئے جبکہ نیب نے ابھی تک عبدالعلیم خان کے خلاف ریفرنس دائر نہیں کیا۔ علیم خان نے الیکشن کمیشن میں اثاثے ظاہر کئے اس وقت ان کے خلاف کسی نے شکایت بھی نہیں کی۔

عدالت نے قرار دیا کہ بغیر ٹھوس شواہد کے کسی کو بلا جواز جیل میں نہیں رکھا جاسکتا۔

یاد رہے  لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے عبدالعلیم خان کی درخواست ضمانت پر فیصلہ سناتے ہوئے علیم خان کی ضمانت منظور کرتے ہوئے رہائی کا حکم دیا تھا۔

بعد ازاں علیم خان نے پر رہائی ملنے کے بعد میڈیا سے گفتگو  میں کہا تھا ایک روپے کی بھی اگر کرپشن کی ہو تو سیاست چھوڑ دوں گا،  مجھ سے کسی نے نا انصافی کی تو انصاف مجھے اللہ ہی دیں گے، قانون میں سقم ہے، تفتیش تک جیل میں ڈالنا بہت بڑا ظلم ہے۔

واضح رہے 6 فروری کو نیب لاہور نے آمدن سے زائد اثاثہ جات اورآف شورکمپنیوں کیس میں پنجاب کے سینئر وزیرعبدالعلیم خان کو گرفتار کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں