The news is by your side.

Advertisement

احتساب عدالت نےعلیم خان کو15روزہ جوڈیشل ریمانڈ پرجیل بھجوا دیا

لاہور: احتساب عدالت نے آمدن سے زائد اثاثہ جات اور آف شور کمپنی کیس میں گرفتار پی ٹی آئی کے سینئر رہنما علیم خان کو15 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پرجیل بھیجنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق آمدن سے زائد اثاثوں اورآف شور کمپنی رکھنے کے الزام میں گرفتار پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علیم خان کو لاہور کی احتساب عدالت میں پیش کیا گیا۔

احتساب عدالت کے معزز جج نجم الحسن بخاری نے علیم خان کے خلاف کیس کی سماعت کی۔

وکیل علیم خان نے سماعت کے آغاز پر دلائل دیتے ہوئے کہا کہ علیم خان کے مزید جسمانی ریمانڈ کی ضرورت نہیں ہے۔

انہوں نے بتایا کہ علیم خان آف شورکمپنیاں اورجائیدادیں گوشواروں میں ظاہرکرچکے ہیں، تمام ریکارڈ نیب کودے چکے اب مزید نئی تحقیقات نہیں ہورہیں۔

احتساب عدالت نے نیب کی جانب سے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد کرتے ہوئے علیم خان کو15روزہ جوڈیشل ریمانڈ پرجیل بھجوا دیا۔

علیم خان کی پیشی کے موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے، عدالت کی طرف آنے والے راستوں کو کینٹرزاورخاردارتاریں لگا کرسیل کردیا گیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ سماعت پر عدالت میں نیب کی جانب سےعلیم خان سے ہونے والی تفتیش کی رپورٹ پیش کی گئی تھی اور ملزم کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی تھی۔

علیم خان کے جسمانی ریمانڈ میں 5 مارچ تک توسیع

بعدازاں احتساب عدالت نے آمدن سے زائد اثاثہ جات اور آف شور کمپنی کیس میں گرفتار پی ٹی آئی کے سینئر رہنما علیم خان کے جسمانی ریمانڈ میں 5 مارچ تک توسیع کردی تھی۔

واضح رہے 6 فروری کو نیب لاہور نے آمدن سے زائد اثاثہ جات اورآف شورکمپنیوں کیس میں پنجاب کے سینئر وزیرعبدالعلیم خان کو گرفتارکیا تھا۔

نیب کی جانب سے گرفتاری کے بعد علیم خان نے اپنا استعفیٰ وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کو بھجوا دیا تھا، علیم خان کا کہنا تھا کہ مقدمات کا سامنا کریں گے، آئین اورعدالتوں پریقین رکھتے ہیں، مجھ پر آمدن سے زائد اثاثوں کا نہیں، آفشور کمپنیوں کا مقدمہ ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں