بریسٹ کینسر کے خلاف آگاہی کے لیے کام کرنے والی ’چنگنونا‘ -
The news is by your side.

Advertisement

بریسٹ کینسر کے خلاف آگاہی کے لیے کام کرنے والی ’چنگنونا‘

لاطینی امریکا سے تعلق رکھنے والی ایلیہنڈرا کمپووردی چاہتی ہیں کہ بریسٹ کینسر کے خلاف آگاہی کو زیادہ سے زیادہ فروغ دیا جائے اور وہ اس کے لیے نہایت سرگرم ہیں۔

ایلیہنڈرا ہارورڈ یونیورسٹی کی گریجویٹ ہیں، وہ صحافی اور ماڈل بھی ہیں جبکہ سابق صدر اوباما کی مشیر بھی رہ چکی ہیں۔

بریسٹ کینسر کے بارے میں مزید معلومات

ان کے سماجی کاموں کی وجہ سے انہیں ’چنگنونا‘ کہا جاتا ہے۔ لاطینی امریکا میں لفط چنگونا ایسی خواتین کے لیے استعمال کیا جاتا ہے جو بھلائی کے لیے مردانہ وار کام کرے اور کسی سے نہ ڈرے۔

وہ کہتی ہیں، ’صدر ٹرمپ اپنی گفتگو میں خواتین کے جسم کا ذکر کرتے ہیں، ٹھیک ہے ایسا ہے تو ایسا ہی صحیح، خواتین کا جسم صرف خوبصورت دکھنے کے لیے نہیں، ہم ایک مکمل انسان ہیں‘۔

ایلیہنڈرا ایسے جین کی حامل ہیں جو خواتین میں بریسٹ کینسر کا خطرہ عام خواتین کے مقابلے میں 85 فیصد بڑھا دیتا ہے۔

یہ جین ان کے خاندان میں موجود ہے اور ان کی والدہ سمیت خاندان کی کئی خواتین بریسٹ کینسر کا شکار ہیں۔

ایلیہنڈرا چاہتی ہیں کہ اس مرض کے خلاف نہ صرف زیادہ سے زیادہ آگاہی پھیلائی جائے بلکہ ہم اپنے بچوں کو بھی اس بارے میں آگاہ کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں