میشا شفیع کے الزامات، علی ظفر نے خاموشی توڑ دی
The news is by your side.

Advertisement

میشا شفیع کے الزامات، علی ظفر نے خاموشی توڑ دی

کراچی: پاکستانی اداکار و گلوکار علی ظفر نے پہلی بار میشا شفیع کے معاملے پر خاموشی توڑتے ہوئے کہا ہے کہ  جھوٹے اور بے بنیاد الزامات پر بہت افسوس ہوا، قانونی طریقے سے انصاف کے لیے جنگ لڑ رہا ہوں۔

برطانوی خبررساں ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے علی ظفر کا کہنا تھا کہ میں اس معاملے کو سوشل میڈیا پر اچھالنا نہیں چاہتا اور نہ ہی اس پر بات کرنا چاہتا ہوں کیونکہ مجھے قانون پر مکمل بھروسہ ہے اور اُسی کے ذریعے انصاف کا حصول ممکن ہے۔

پاکستانی گلوکار کا کہنا تھا کہ ’میشا شفیع کو کبھی نقصان پہنچانے کا سوچ بھی نہیں سکتا کیونکہ وہ میری بہت قریبی اور خاندانی دوست ہیں بلکہ میری اہلیہ وہ گلوکارہ آپس میں دوست بھی تھیں’۔

اپنے اوپر لگنے والے الزام پر علی ظفر کا کہنا تھا کہ جس تقریب کا حوالہ دے کر مجھے گھیسٹا جارہا ہے وہاں شوبز انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے 10 لوگ اور بھی تھے جن میں 2 خواتین بھی شامل ہیں، یہ سب میشا کی بات سُن کر حیران تھے اور ان کا مؤقف تھا کہ آخر وہ ایسا کیوں سوچ رہی ہے؟۔

مزید پڑھیں : عدالت نے میشا شفیع کو اداکار علی ظفر کیخلاف بیان بازی سے روک دیا

ایک اور سوال کے جواب میں علی ظفر کا کہنا تھا کہ ’مجھے اپنے اوپر لگنے والے الزامات کی کوئی فکر نہیں کیونکہ جب ہم سچ اور سیدھے راستے پر ہوں تو کامیابی ضرور ملتی ہے البتہ میشا نے جو بات کہی اُس پر تکلیف ہوئی اور دل ٹوٹ گیا’۔

واضح رہے کہ رواں برس اپریل میں گلوکارہ میشا شفیع نے علی ظفر پر جنسی ہراسانی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ علی ظفر نے انہیں ایک زائد بار جنسی طور پر ہراساں کیا۔

انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ ‘میں اپنے ساتھ جنسی ہراساں کرنے کے واقعے پر اس لیے خاموشی توڑ رہی ہوں کیونکہ مجھے لگتا ہے معاشرے میں موجود خاموش رہنے کی روایت کو ختم کیا جاسکتا ہے‘۔

نامور پاکستانی گلوکار و اداکار علی ظفر نے ساتھی گلوکارہ کے الزامات پر ردعمل دیتے ہوئے میشا کو عدالت لے جانے کا اعلان کیا تھا۔

علی ظفر نے اپنے اوپر لگائے جانے والے الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے میشا شفیع کو قانونی نوٹس بھیجا تھا، جس میں کہا گیا تھا کہ مجھ پر لگائے گئے الزامات کو گلوکارہ فوری طور پر واپس لیں ورنہ وہ ان پر 100 کروڑ ہرجانے کا دعویٰ دائر کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں: ہرجانہ کیس ،میشا شفیع کو دوبارہ عدالتی نوٹس جاری

میشا شفیع کے وکیل بیرسٹرمحمد احمد پنسوٹا نے تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہمیں نوٹس موصول ہوگیا ہے ہم جائزہ لے رہے ہیں، میشا کی جانب سے علی ظفر  پر  لگائے گئے تمام الزامات سچ پر مبنی ہیں۔

بعد ازاں علی ظفر نے 100 کروڑ روپے کا ہرجانہ دعویٰ لاہور ہائی کورٹ میں دائر کیا، جس میں اُن کا کہنا تھا کہ مجھ پر ہراسگی کا جھوٹا اور بے بنیاد الزام لگایا گیا‘۔

جولائی کی 5 تاریخ کو ہرجانہ کیس کی سماعت میں عدالتی حکم کے باوجود میشا شیفع نے جواب داخل نہیں کرایا، جس کے بعد عدالت نے 13 اگست تک سماعت ملتوی کرتے ہوئے انہیں دوبارہ نوٹس جاری کیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں