تھوڑا سا مشکل وقت برداشت کرلیں آگے بہت اچھا وقت ہے،علی زیدی
The news is by your side.

Advertisement

تھوڑا سا مشکل وقت برداشت کرلیں آگے بہت اچھا وقت ہے،علی زیدی

کراچی : وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ علی زیدی نے کہا کہ تھوڑا سا مشکل وقت برداشت کرلیں، آگے بہت اچھا وقت ہے، پورٹ پربہت مسائل ہیں میں انہیں حل کرکے دکھاؤں گا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ علی زیدی نے میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے پاکستان کو بہت خوبصورتی سے نوازا ہے، لوگوں کا تعاون حاصل رہا تو بہترین پورٹس بناکر دکھاؤں گا، ابھی پورٹ اورشپنگ وزارت میں بہتری کی بہت گنجائش ہے۔

علی زیدی کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کلین اینڈگرین پاکستان مہم شروع کرنےجارہےہیں، آلودگی بڑامسئلہ ہے، جس کے خاتمے کیلئے بہت کام کرنا ہے، 2ماہ میں وعدہ ہے کہ آپ لوگ فرق محسوس کریں گے، پورٹس ہی ہوتی ہیں، جس کے ذریعے تجارت کو بڑھایا جاسکتا ہے۔

وزیر پورٹ اینڈ شپنگ نے کہا سنا ہے ڈالر 140روپے تک جائے گا، 100 دن میری منسٹری میں آجائیں جو کام ہوا ہے نظر آجائے گا، پورٹ پربہت مسائل ہیں میں انہیں حل کرکے دکھاؤں گا۔

سنا ہے ڈالر 140روپے تک جائے گا

ان کا کہنا تھا کہ عزیربلوچ اورسانحہ بلدیہ کی جےآئی ٹی رپورٹ ریلیزکردی تھی،جے آئی ٹی رپورٹس عدالت میں جمع ہونے کا انتظار کر رہا ہوں، جے آئی ٹی رپورٹس میرے پاس الیکشن سے پہلے آگئی تھیں،اب عدالت میں جمع ہوں گی تو صحیح یاغلط کا پتہ چل جائے گا۔

علی زیدی نے کہا جےآئی ٹی رپورٹس میں جن لوگوں کے نام ہیں، انہیں بھی پکڑا جائے،عدالت ہمارے ماتحت نہیں جب عدالت کہے گی رپورٹس ریلیز کردیں گے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا شروع میں تھوڑی مشکلات ہونگی، وزیرکی تنخواہ کسی سے ڈھکی چھپی نہیں، تھوڑا سے مشکل وقت برداشت کرلیں آگے بہت اچھا وقت ہے، حکومتی ڈبوں میں دستاویزات بھی جعلی جمع کرائی گئی ہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ سب کی مشترکہ ذمےداری ہے کہ آبی آلودگی روکنے کیلئے کام کریں، صنعت کار ذمے داری کا احساس کریں اور کمپنیوں میں پلانٹ لگائیں۔

وزیر پورٹ اینڈ شپنگ کا کہنا تھا کہ آبی آلودگی سے ہم نے میرین لائیو کو تباہ کردیا ہے، اللہ نے خوبصورت کوسٹ لائن عطا کی، جس کو ہم نے خراب کردیا، اپنی کوسٹ لائن کواب مشترکہ ذمے داری سمجھ کر واپس بہتر بنانا ہے، پاکستان میں اب بہتری آئے گی ملک اب اوپر کی جانب جائےگا۔

علی زیدی نے کہا شریف فیملی کیخلاف ان کی حکومت میں بنائےکیسزپرکارروائی ہوئی، قانون حرکت میں آچکا ہے، کیا ہے تو بھگتنا پڑے گا، جہانگیر ترین اور بابراعوان نے بھی قانون کا سامنا کیا۔

ترچھی ٹوپی والے کی طرح راتوں رات فیصلے نہیں کریں گے

ان کا کہنا تھا کہ ادارےخودمختارہیں نیب اورایف آئی اے کو کوئی ہدایت نہیں دی جاتیں، ترچھی ٹوپی والے کی طرح راتوں رات فیصلے نہیں کریں گے، عوام دشمن فیصلے70سال میں کیے گئے ہم یہ مسائل حل کرنے آئے ہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا کینسرکاعلاج ڈسپرین سے نہیں ہوسکتا تھوڑی تکلیف برداشت کرنا ہوگی، پورٹ قاسم کی زمینوں کی الاٹمنٹ کا ریکارڈ مانگاہے، ریکارڈ مانگا تو رات3 بجے تک میرے فون بجتے رہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں