The news is by your side.

Advertisement

جاپان کے سفیر کی علی زیدی کو ترقیاتی منصوبوں میں تعاون کی یقین دہانی

اسلام آباد : جاپان کے سفیر نے علی زیدی سے ملاقات میں ترقیاتی منصوبوں کورنگی فش ہاربر میں نیلامی ہال کی تعمیر، بزنس پارک کا قیام میں تعاون کی یقین دہانی کراتے ہوئے ایک ایم او سی کا بھی ذکر کیا، جس کے تحت پاکستانی، فشریز اور میری ٹائم سیکٹر میں روزگار حاصل کرنے کے مواقع کو بروئے کار لا سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں جاپان کے سفیر ایچ ای میتسوڈا کونینوری اور مسٹر توکیتا یوجی، معیشت و ترقی کے مشیر نے وفاقی وزیر برائے سمندری امور سید علی حیدر زیدی سے کورنگی فش ہاربر کے ترقیاتی منصوبوں پر تبادلہ خیال کرنے کے لئے ملاقات کی، دونوں فریقوں نے اس عمل کو تیز کرنے پر زور دیا تاکہ COVID-19 کے بعد جب حالات معمول پر آجائیں تو ان پر کام شروع ہوسکے۔

منصوبوں میں کورنگی فش ہاربر میں نیلامی ہال کی تعمیر، بزنس پارک کا قیام اور کولڈ اسٹوریج فریزنگ ٹنل شامل ہیں۔ یہ منصوبے ڈبلیو ٹی او ، یورپی یونین اور سمندری غذا کی درآمد کرنے والے ممالک کے طے کردہ معیار پر پورا اترنے میں مدد کریں گے۔

علی زیدی نے دوسری جنگ عظیم کے بعد جاپان کی مثالی ترقی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ جاپانی معیشت نے “اندرونی” حکمت عملی کی اہمیت کا اعادہ کیا، جس کے تحت افرادی قوت کی ترقی کو اولین اہمیت دی جاتی ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ پاکستان میں ہمارے پاس مہارتو صلاحیت موجود ہے جس کو صرف کچھ نکھارنے کی ضرورت ہے، سستی لیبر مارکیٹ کی وجہ سے پیداوار کی لاگت کم ہے اور برآمدات کے شعبے کے لئے ہماری شرح رزِ مبادلہ سازگار ہے۔ ہمیں صرف سازگار ماحول کی تشکیل کی ضرورت ہے، ہمارے عوام اور ہماری قوم ترقی میں تمام اقوامِ عالم کو پیچھے چھوڑ دینگے

علی زیدی نے پورٹ قاسم میں جاپانی کمپنیوں کے لئے ایک تکنیکی صنعتی زون کی تجویز پیش کی، اس کے علاوہ دونوں نے ماہی گیروں کے لئے ایک تربیتی ادارے کے قیام پر بھی گفتگو کی جہاں گہرے سمندر کی ماہی گیری سے متعلقہ آئندہ نسل کو تربیت دی جائے گی۔

جاپانی سفیر نے جاپان اور پاکستان کے مابین گذشتہ سال ہونے والی ایک ایم او سی کا بھی ذکر کیا، جس کے تحت پاکستانی، فشریز اور میری ٹائم سیکٹر میں روزگار حاصل کرنے کے مواقع کو بروئے کار لا سکتے ہیں۔

علی زیدی نے جاپانی بحری جہاز کمپنیوں میں پاکستانی سی گیئررز کو ملازمت دینے پر بھی محترم سفیر سے بات کی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں