The news is by your side.

Advertisement

صدر آل سٹی تاجر اتحاد اور صوبائی وزیر سعید غنی آمنے سامنے

ایک ماہ 6 دن ہو چکے ہیں ہمارے پاس پیسے ختم ہو چکے، 8 دن سے سندھ حکومت کے رابطے کا انتظار کر رہے ہیں: تاجر

کراچی: شہر قائد کے تاجروں اور حکومت سندھ کے درمیان لاک ڈاؤن کے دوران دکانیں کھولنے کے معاملے پر تنازعہ حل نہیں ہو سکا ہے۔

تفصیلات کے مطابق آج صبح اے آر وائی نیوز کے مارننگ شو میں تاجر تنظیم کے سربراہ اور صوبائی وزیر تعلیم سندھ سعید غنی ایک بار پھر آمنے سامنے آ گئے۔

آل سٹی تاجر اتحاد کے صدر شرجیل گوپلانی نے شکوہ کیا کہ دکانوں کھولنے سے متعلق سندھ حکومت کے ساتھ ایس او پی طے ہو گئے تھے، وزیر اعلیٰ سندھ سے بھی بات ہو گئی تھی، ہمیں اطلاع ملی وزیر اعلیٰ سندھ ایس او پی وزیر اعظم کو بھجوا رہے ہیں، اور ہم سے 48 گھنٹے کے انتظار کا کہا گیا جو ہم نے کیا لیکن یہ انتظار ختم نہ ہو سکا۔

تاجروں نے یکم رمضان سے تمام مارکیٹس کھولنے کا اعلان کردیا

شرجیل گوپلانی نے کہا کہ 48 گھنٹے گزرنے کے بعد ہماری کوشش کے باوجود حکومت سندھ نے ہم سے رابطہ نہیں کیا۔

صوبائی وزیر سعید غنی نے کہا کہ تاجروں سے اچھے ماحول میں بات چیت ہو رہی تھی، لیکن لگتا ہے کہ ہمارے دوستوں کو کچھ جلدی تھی، وزیر اعلیٰ سندھ سے ان کی ملاقات ہوئی، اس کے بعد ہماری تاجروں سے پھر بات چیت ہوئی، وزیر اعلیٰ نے واضح کہا تھا کہ حکومت سندھ اپنے طور پر فیصلہ نہیں کرے گی، وزیر اعظم کو بھی اس سے آگاہ کیا جائے گا لیکن دوستوں نے جلدی بازی کی اور دکانیں کھول دیں۔

صدر آل سٹی تاجر اتحاد نے کہا کہ حکومت سندھ کی طرف سے دکانیں کھولنے والے تاجروں کے خلاف مقدمے میں 6 دفعات لگا دی گئی ہیں، تاجروں کو تنبیہ کے بعد چھوڑ دینا چاہیے تھا، اس معاملے پر ہم سے بات کرنی چاہیے تھی لیکن نہیں کی گئی۔

تاجر یکم رمضان کو دکانیں نہیں کھولیں گے، سعید غنی

انھوں نے کہا کہ جب 2 سے 3 دن حکومت سندھ رابطہ نہیں کرے گی تو ہم کیا کریں گے، ایک ماہ 6 دن ہو چکے ہیں ہمارے پاس پیسے ختم ہو چکے ہیں، اپنے ملازمین کو دینے کے لیے پیسے نہیں، ہم 8 دن سے صرف انتظار ہی کر رہے ہیں، اب مذاکرات سے آگے چلیں اور کوئی نتیجہ بھی دیں۔

خیال رہے کہ سندھ تاجر اتحاد کی جانب سے جیل بھرو تحریک کی دھمکی بھی دی جاچکی ہے، تاجروں نے رمضان میں کاروبار کھولنے کا اعلان کیا ہے جب کہ سندھ حکومت نے واضح کہہ دیا ہے کہ کاروبار نہیں کھولے جائیں گے۔ گزشتہ روز کراچی میں لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر پولیس نے آل سٹی تاجر اتحاد کے رہنما حماد پونا والا اور جاوید قریشی سمیت 6 تاجروں کو گرفتار کیا تھا، پولیس نے آئرن مارکیٹ میں کھلنے والی دکانیں بھی سیل کر دی تھیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں