شاعرِمشرق علامہ اقبال کی آج 139ویں سالگرہ ہے -
The news is by your side.

Advertisement

شاعرِمشرق علامہ اقبال کی آج 139ویں سالگرہ ہے

آج شاعرِ مشرق مفکر ِپاکستان ڈاکٹر علامہ اقبال کی آج 139 ویں سالگرہ ہے، ان کا فکری پیغام برصغیر کے مسلمانوں میں بیداری کی لہر پیدا کرنے کا بنیادی سبب بنا تھا۔

ڈاکٹر سر علامہ محمد اقبال 9 نومبر 1877کو پنجاب کے ضلع سیالکوٹ میں پیداہوئے تھے‘ آپ بیسویں صدی کے ایک معروف شاعر، مصنف، قانون دان، سیاستدان، مسلم صوفی اور تحریک پاکستان کی اہم ترین شخصیات میں سے ایک ہیں۔

اردو اور فارسی میں شاعری کرتے تھے اور یہی ان کی بنیادی وجۂ شہرت ہے۔ شاعری میں بنیادی رجحان تصوف اور احیائے امت اسلام کی طرف تھا۔

علامہ اقبال کو دورجدید کا صوفی سمجھا جاتا ہے۔ بحیثیت سیاستدان ان کا سب سے نمایاں کارنامہ نظریۂ پاکستان کی تشکیل ہے، جو انہوں نے 1930ء میں الہ آباد میں مسلم لیگ کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے پیش کیا تھا۔

یہی نظریہ بعد میں پاکستان کے قیام کی بنیاد بنا۔ اسی وجہ سے علامہ اقبال کو پاکستان کا نظریاتی خالق سمجھا جاتا ہے گو کہ انہوں نے اس نئے ملک کے قیام کو اپنی آنکھوں سے نہیں دیکھا لیکن انہیں پاکستان کے قومی شاعر کی حیثیت حاصل ہے۔

علامہ اقبال کی اردو، انگریزی اور فارسی زبان میں تصانیف میسرہیں


 سندھ اوربلوچستان کے تعلیمی اداروں میں تعطیل کا اعلان


نثر

علم الاقتصاد

فارسی شاعری

اسرار خودی
رموز بے خودی
پیام مشرق
زبور عجم
جاوید نامہ
پس چہ باید کرد اے اقوامِ شرقأ
ارمغان حجاز


ایران کی ایک شاہراہ ’شاعرِمشرق‘ کے نام سے منسوب ہے


اردو شاعری

بانگ درا
بال جبریل
ضرب کلیم

انگریزی تصانیف

فارس میں ماوراء الطبیعیات کا ارتقاء
اسلام میں مذہبی افکار کی تعمیر نو

آپ 21 اپریل 1938 کو ساٹھ سال کی عمر میں لاہور میں انتقال فرما گئے آپ کا مزار بادشاہی مسجد کے سائے میں مرجع خلائق ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں