The news is by your side.

Advertisement

ارکان پارلیمنٹ سے متعلق آئی بی کی مبینہ فہرست، عدالتی انکوائری کا مطالبہ

اسلام آباد : آئی بی کی ارکان پارلمینٹ سے متعلق مبینہ فہرست پرسیاست دانوں نے جوڈیشل انکوائری کامطالبہ کردیا، ان کا کہنا ہے کہ ارشد شریف کے ساتھ جو کیا جارہا ہے اس کی بھی تحقیقات ہونی چاہئیں۔

تفصیلات کے مطابق انٹیلی جینس بیورو(آئی بی) کی ارکان پارلیمنٹ سے متعلق مبینہ فہرست پر انکوائری کا مطالبہ کرتے ہوئے پی ٹی آئی رہنما شاہ محمودقریشی نے کہا کہ معاملے کی شفاف انکوائری ہونی چاہئے ورنہ جو آج ارشد شریف کے ساتھ ہورہا ہے کل کسی اور صحافی کے ساتھ بھی ایسا ہی ہوگا۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ معاملے کی مکمل تحقیقات کرائی جائیں سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ جوڈیشل کمیشن بننا چاہیے تاکہ سچ سامنے آئے۔

اے آروائی نیوز سے بات کرتے ہوئے اسپیکرسندھ اسمبلی آغا سراج درانی کا کہنا تھا کہ انکوائری ہوگی تو معلوم ہوگا کہ فہرست بنانے کےپیچھے کس کا ہاتھ ہے۔

آغاسراج درانی نے کہا کہ نوازشریف اداروں کو دھمکیاں دے رہےہیں، اداروں کونقصان پہنچا تو تاریخ معاف نہیں کرے گی، نواشریف کے رویے سےسسٹم کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے، وہ پاکستان میں بادشاہت چاہتےہیں، بادشاہوں کی طرح آتےہیں دھمکیاں دیتےاورچلےجاتےہیں۔

اس حوالے سے رہنما پی ایس پی رضاہارون نے بھی جوڈیشل انکوائری کامطالبہ کردیا انہوں نے ارشدشریف کوہراساں کرنےکی مذمت کی۔

سیاسی رہنماؤں کا کہنا ہے کہ معاملے کی تحقیقات کرانے پر اس لئے زور ڈال رہے ہیں تاکہ دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہوجائے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں