site
stats
پاکستان

طیارہ حادثہ: معاوضے کیلئے لوگوں کا تنہا لڑکی سے رشتہ داری کا دعویٰ

چترال: طیارے حادثے میں چترال سے تعلق رکھنے والی 14 سالہ لڑکی اپنے پورے خاندان سے محروم ہو گئی، اسے معاوضہ میں تین کروڑ روپے ملیں گے جس کے بعد کئی افراد ہمدردی یا رقم کے لالچ میں لڑکی سے رشتہ داری کا دعویٰ کررہے ہیں۔

7 دسمبر کو حویلیاں طیارہ حادثے میں جہاں جنید جمشید سمیت 47 افراد لقمہ اجل بنے وہیں چترال سے تعلق رکھنے والی 14 سالہ لڑکی حسینہ کا پورا خاندان حادثے کی نذر ہوا۔

حادثے میں حسینہ کے ماں، باپ، دو بھائی اور دو بہنیں جاں بحق ہوئیں جن کی میتیں لینے اسے اسلام آباد آنا پڑا ۔

14 سالہ حسینہ کو اپنے گھروالوں کے ساتھ سفر کرنا تھا مگر امتحانات کی وجہ سے سفر ملتوی کردیا تھا ۔

دنیا میں تنہا رہ جانے والی حسینہ میتیں لینے تو اکیلی آئی لیکن اب اس کے گاؤں کے کئی افراد حسینہ کے خاندان سے تعلق کا دعویٰ کررہے ہیں۔

یہ ہمدردی ہے یا امدادی رقم کی لالچ،میڈیا رپورٹس کے مطابق حسینہ کو امدادی رقم میں چھ افراد کے حادثے کا شکار ہونے کی وجہ سے تین کروڑ روپے ملیں گے۔

پی آئی اے انتظامیہ کے مطابق ابھی صرف 5 لاکھ روپے حسینہ کو دیئے جائیں گے جو تدفین کے لیے ہوں گے باقی رقم کی ادائیگی کا بعد میں فیصلہ کیا جائے گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق حسینہ گل نے گاؤں جانے سے انکار کیا ہے اور تعلیم کا سلسلہ جاری رکھنے کا عزم ظاہر کیا ہے اور اس سلسلے میں حکومت سے مدد کی اپیل بھی کی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top