امریکہ : کانگریس میں پاکستان کو دہشت گرد قرار دینے کا بل پیش -
The news is by your side.

Advertisement

امریکہ : کانگریس میں پاکستان کو دہشت گرد قرار دینے کا بل پیش

واشنگٹن : پاکستان کو دہشت گرد ریاست قرار دینے کیلئے امریکی قانون سازوں نے کانگریس میں بل پیش کردیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکہ کے دو قانون سازوں نے کانگریس میں بل پیش کیا ہے جس میں پاکستان کو ’دہشت گردی کی کفیل ریاست‘ قرار دینے کی تجویز دی گئی ہے۔ مذکورہ بل ٹیکساس سے تعلق رکھنے والے ممبر کانگریس ٹیڈ پو اور کیلیفورنیا سے منتخب ہونے والے ممبر ڈینا روہرابیچر نے پیش کیا ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق ٹیڈ پو کا کہنا تھا کہ پاکستان ایک ’ناقابل اعتماد اتحادی‘ ہے، انہوں نے الزام عائد کیا کہ پاکستان کئی سالوں سے امریکہ کے دشمنوں کی امداد کرتا آیا ہے۔

انہوں نے حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اسامہ بن لادن کی پرورش سے لے کر حقانی نیٹ ورک سے اس کے تعلقات جیسے ثبوت اس بات کے لیے کافی ہیں کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کس کے ساتھ ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اس بل کی وجہ سے اوباما انتظامیہ کو اس سوال کا باضابطہ طور پر جواب دینا ہو گا۔ وقت آ گیا ہے کہ پاکستان کی امداد بند کردی جائے اور اسے دہشت گردی کی امداد کرنے والی ریاست قرار دے دیا جائے۔

واضح رہے کہ کانگریس کے ممبر ٹیڈ پو ہاؤس کمیٹی برائے دہشت گردی کے چیئرمین بھی ہیں۔ یہ بل ایسے وقت میں پیش کیا گیا ہے جب وزیراعظم پاکستان نواز شریف اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے سلسلے میں امریکہ میں موجود ہیں۔

ذرائع کے مطابق مبصرین کا کہنا ہے کہ ان دو ارکان کی جانب سے پاکستان کیخلاف پیش کیے گئے اس بل کے منظور ہونے کے کوئی امکانات نہیں ہیں۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں