The news is by your side.

Advertisement

افغانستان میں داعش کے جدید سیل موجود ہیں: امریکا

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خصوصی نمائندے ہبریٹ میک گریک کا کہنا ہے کہ افغانستان میں داعش کے جدید سیل موجود ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے امریکی دارالحکومت واشنگٹن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا، ہبریٹ میک گریک کا کہنا تھا کہ کوشش ہے افغانستان میں داعش سے مقامی طور پر نمٹا جائے۔

انہوں نے کہا کہ داعش کا مکمل خاتمہ ایک طویل المدتی منصوبہ ہے، عراق اور شام کو داعش نے اپنا ہیڈکوارٹرز بنا رکھا تھا، جسے ختم کیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ عراق، شام سے داعش دنیا بھر میں چھوٹے گروہوں کو ہدایات دیتی تھی، اب داعش کے نیٹ ورک سے متعلق صورت حال بالکل مختلف ہے۔

خیال رہے کہ بریٹ میک گریک داعش کےخلاف عالمی اتحاد کے لیے صدرٹرمپ کےخصوصی مشیر ہیں۔

انتہاپسند گروہ داعش افغانستان میں دوبارہ منظم ہورہا ہے: برطانیہ کا انتباہ

واضح کہ رواں سال ستمبر میں برطانوی وزیر دفاع ’گیون ویلیمسن‘ نے ایک انٹرویو میں خبردار کیا تھا کہ داعش کی سرگرمیاں افغانستان میں بڑھ رہی ہیں اور وہ پھر سے افغانستان میں حملے کر سکتے ہیں۔

انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ داعش ناصرف افغانستان بلکہ برطانیہ سمیت دیگر یورپی ملکوں کے لیے خطرہ ہے، دولت اسلامیہ کی جانب سے حملوں کی دھمکیاں بھی دی جارہی ہیں، ہمیں ان خطرات سے نمٹنے کے لیے ہرممکن اقدامات کرنے ہوں گے تاکہ ماضی میں ہونے والے داعش کے بڑے حملوں سے محفوظ رہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں