The news is by your side.

Advertisement

امریکی سفیر پال جونز لاہور کی تاریخی عمارتوں کے فین ہوگئے

لاہور: امریکی سفیر پال جونز لاہور کی تاریخی عمارتوں کے فین ہوگئے، دورے کے موقع پر تعریف کیے بغیر نہ رہ سکے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے دورے پر پال جونز نے شاہی قلعے اور حضوری باغ کی سیر کی، امریکی سفیر کی اہلیہ بھی ساتھ تھیں۔

امریکی سفیر پال جونز نے اہلیہ کے ہمراہ لاہور کی تاریخی عمارات حضوری باغ اور شاہی قلعے کے مختلف حصوں کا دورہ کیا۔

تاریخی عمارات کے اس دورے میں امریکی قونصل جنرل کولین کورلیج بھی امریکی سفیر کے ہمراہ تھیں، لاہور کے مغلیہ فنِ تعمیر شاہی قلعہ اور حضوری باغ کی سیر کی اور پارے بھی دیکھے۔

امریکی سفیر نے پاکستان کے تاریخی ورثے کو سیاحت کے لیے پر کشش قرار دیا، انہوں نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی کوششوں کو بھی سراہا۔

خیال رہے کہ اقوام متحدہ کا زیلی ادارہ یونیسکو پاکستان کے آٹھ مقامات کو تاریخی ورثے کی حثیت قرار دے چکا ہے۔

ان مقامات میں ڈر اور قعلہ چولستان، بلوچستان کا خوبصورت علاقہ ہنگول، ثقافتی لحاظ سے منفرد حیثیت رکھنے والا نگرپارکر جبکہ مرکزی نیشنل قراقرم اور ڈیوسائی گلگت بلتستان پارک، زیارت کے وسیع جونپر کے جنگلات اور آب پاشی کے لیے بنائے گیا کاریز سسٹم اور کھیوڑا کی نمک کی کانیں شامل ہیں۔

یاد رہے کہ سفیر پال جونز امریکی محکمہ خارجہ کی سینئر فارن سروس کے کیریئر ممبر ہیں۔ انہوں نے پولینڈ میں 2015 سے 2018 تک بطور سفیر خدمات سرانجام دیں ہیں۔

قبل ازیں انہوں نے بطور پرنسپل نائب معاون وزیر خارجہ برائے یورپ اور یورو ایشیائی امور (2013 سے 2015 ) ، ملائیشیا میں بطور امریکی سفیر (2010 سے2013 تک ) ، بیک وقت نائب امریکی خصوصی ایلچی برائے افغانستان و پاکستان اور نائب معاون وزیر خارجہ برائے جنوب ایشیائی امور (2009 سے2010 ) کی ذمہ داریاں نبھائیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں