The news is by your side.

Advertisement

پاکستان سرمایہ کاری کے لیے موزوں،95 فیصد امریکی کمپنیوں کی رائے

 

نیویارک: امریکن بزنس کونسل کے سروے میں 95 فیصد سرمایہ کار کمپنیوں نے پاکستان کو سرمایہ کاری کے لیے موزوں قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکن بزنس کونسل کے سالانہ سروے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ امریکی سرمایہ کار کمپنیوں کے لیے پاکستان میں سرمایہ کاری  کا ماحول ساز گار ہے اور 95 فیصد امریکی کمپنیاں پاکستان کے طویل المدت معاشی اور آپریٹنگ ماحول کے بارے میں پُرامید ہیں۔

سروے کا نتیجہ جو گزشتہ برس سے 6 فیصد زیادہ ہے امریکن بزنس کونسل کے صدر کامران نشاط نے کہا کہ ہماری کونسل پاکستان کو خوشحال ملک دیکھنا چاہتی ہے۔

پاکستانی معیشت کے بارے میں سروے میں 40 فیصد سے زائد کمپنیوں کی رائے تھی کہ پاکستان کے بارے میں تصور بہتر ہوا ہے، سروے میں پاکستانی پالیسیوں میں تسلسل، سیاسی صورت حال، امن و امان، اندرونی اور بیرونی سیاسی صورت حال، حکومتی ترقیاتی بجٹ اور غیر دستاویزی معیشت شامل ہیں۔

سروے میں آپریشنز کے اخراجات سب سے زیادہ رائے کے حامل تھے جس کے بارے میں 87 فیصد نے رائے دی اس کے بعد انفرا اسٹرکچر کو 84 فیصد نے اہم گردانا، امن و امان کو 80 فیصد نے اہم قرار دیا جبکہ 75 فیصد نے سیاسی غیر یقینی کو سب سے زیادہ اہم قرار دیا۔

سروے میں تین شعبوں پر عدم اطمینان کا اظہار کیا گیا جو ملکی ترقی میں رکاوٹ ہیں ان میں پالیسیوں پر عمل درآمد میں کمزوری 55 فیصد، 5 فیصد نے سیاسی غیر یقینی کو غیر اطمینان بخش قرار دیا جبکہ ملک میں غیردستاویزی معیشت پر عدم اطمینان کا اظہار 77 فیصد نے کیا۔

سال 2016-17 کے لیے 45 فیصد نے رائے دی کہ کاروباری فضا بہتر ہوئی ہے۔

اے بی سی کے سروے میں قومی اداروں، آئی پی او پی ، ایس ای سی پی، ٹڈاپ، بی او آئی کے بارے میں کمپنیوں نے اطمینان کا اظہار کیا جبکہ انکم ٹیکس، این ڈی ایم اے، واپڈا، نیپرا کے بارے میں کمپنیوں عدم اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ ان کی کارکردگی بہتر بنانے کی گنجائش ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں