The news is by your side.

Advertisement

عامر کے اہل خانہ مجھے مائیکل جیکسن کہتے تھے، اہلیہ

ٹورنٹو: پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کی اہلیہ فریال مخدوم نے کہا ہے کہ سسرال والے مجھے مائیکل جیکسن کہہ کر پکارتے تھے جبکہ عامر کی والدہ مجھے اپنا غلام بنانا چاہتی ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ’’ڈیلی میل‘‘ کو دیئے جانے والے انٹرویو میں کیا۔ فریال مخدوم نے کہا کہ گھر کی باتیں باہر لانا میری عادت نہیں مگر مجبوری کی حالت میں یہ بات کہنا پڑ رہی ہے کہ عامر کے گھر والوں نے میرے ساتھ ہتھک آمیز رویہ رکھا اور مجھے مائیکل جیکسن کہہ کر پکارا جاتا تھا۔


پڑھیں: ’’ جھگڑاختم کریں ایسانہ ہو والدین بیٹا اور اہلیہ شوہر کھو دے، باکسر عامرخان ‘‘


انہوں نے کہا کہ ’’جب عامر کے گھر والے رشتے کے لیے آئے تھے تو اُس وقت میں آدھی آستین کے کپڑوں میں تھیں اُس وقت انہوں نے کوئی اعتراض نہیں کیا مگر بعد میں مجھ پر شراب نوشی سمیت دیگر الزامات عائد کیے گئے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ میں جو بھی کروں مگر اپنے مذہب کا بہت زیادہ احترام کرتی ہوں۔

فریال مخدوم کا کہنا تھا کہ میں نے فیشن شو میں کیٹ واک کی جس کی وجہ سے داد ملی تاہم یہ بات سسرال والوں کو ناگوار گزری اور انہوں نے میرے حوالے سے غلط باتیں کیں، جب میں نے اپنے چہرے کی پلاسٹک سرجری کروائی تو عامر کے گھر والوں نے حسد میں مجھے مائیکل جیکسن کہہ کر پکارا جو میرے لیے تکلیف کا باعث تھا۔

باکسرعامر خان کی اہلیہ کا کہنا تھا کہ میری عادت نہیں کہ سسرال کی باتیں منظر عام پر لاؤں تاہم اب ساری باتیں برداشت سے باہر ہوچکی ہیں اور اب سارے حقائق سامنے لاؤں گی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں